یمن: حوثی وزیر کے قافلے پر میزائل حملہ

Share Article

 

گزشتہ روز یمن کے دارالحکومت صنعاء کے وسط میں حوثی ملیشیا لے ایک وزیر کے قافلے پر نامعلوم مسلح افراد نے میزائل حملہ کیا۔

 

 

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سنہ 2014ء کے آخر سے صنعاء پر حوثی باغیوں کا قبضہ ہے اور انہوںنے دارالحکومت سمیت کئی شہروںمیں نام نہاد حکومت قائم کررکھی ہے۔ عالمی برادری حوثیوں کی حکومت تسلیم نہیں کرتی۔
مقامی ذرائع نے بتایاکہ ہفتے کے روز حوثی حکومت کے وزیر صحت طہ المتوکل کے قافلے پر قاتلانہ حملہ کیا گیا تاہم وہ اس حملے میںمحفوظ رہے البتہ میزائل حملے میں ان کے متعدد ساتھی اور ایک عام شہری زخمی ہوگیا۔ذرائع نے بتایاکہ حوثی لیڈر عبدالملک الحوثی کے قریبی عزیز طہ المتوکل کو نامعلوم افراد نے’لو’ میزائل سے نشانہ بنایا۔ یہ واقعہ صنعاء کے وسط میں فج عطان کے مقام پر پیش آیا تاہم حوثی وزیر اس حملے میں بال بال بچ گئے۔خیال رہے کہ حوثی ملیشیا نے مئی 2018ء کو طہ متوکل کو وزیرصحت کے عہدے پر تعینات کیا تھا۔ طہ متوکل کا شمار حوثیوں کیایک متنازع مبلغ کے طورپر ہوتا ہے۔ طہ متوکل حوثی لیڈر عبدالملک الحوثی کا قریبی عزیز اور بہنوئی ہے۔ وہ مساجد میں تقاریر کے ذریعے حوثی ملیشیا کی حمایت اور حکومت کے خلاف پروپیگنڈہ کرتا رہا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *