ملٹی ٹاسکنگ میں مردوں کی بہ نسبت خواتین زیادہ بہتر ہوتی ہیں: ڈاکٹر حمیدہ طارق

Share Article

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے شعبۂ سیاسیات میں بین الاقوامی یوم خواتین کے موقع پر ایک مذاکرہ سے خطاب کرتے ہوئے نامور ماہر امراض اطفال ڈاکٹر حمیدہ طارق نے کہاکہ ملٹی ٹاسکنگ میں خواتین مردوں کی بہ نسبت زیادہ بہتر ہوتی ہیں ۔ ’خواتین تفویض اختیارات‘ موضوع پر اظہار خیال کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ نوعمر لڑکیاں اپنی توجہ مختلف کاموں میں کامیابی کے ساتھ تبدیل کرنے میں مردوں کے مقابلے زیادہ ماہر ہوتی ہیں۔ ڈاکٹر حمیدہ طارق نے کہا ’’خواتین گھریلو ذمہ داریوں کے ساتھ ہی دیگر ذمہ داریاں بھی کامیابی کے ساتھ انجام دیتی ہیں اور بسااوقات وہ یہ سب کام آسانی کے ساتھ کرتی ہیں‘‘۔ تعلیم، ملازمت کے مواقع اور صحت کے وسائل تک رسائی سمیت ماؤں کی صحت، تشدد، بچپن میں شادی اور صنفی مساوات جیسے امور پر گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ لڑکیوں اور خواتین کو اپنے ہم عمر گروپوں سے مربوط رہنا چاہئے تاکہ بحران کے وقت انھیں نفسیاتی و سماجی مدد حاصل ہوسکے۔

نیویارک کی ڈاکٹر غزالہ کھوکن کہاکہ خوشگوار زندگی کے لئے مرد اور عورت دونوں کو تال میل کے ساتھ کام کرنا ہوگااور دونوں کو ایک دوسرے کا خیال رکھنا چاہئے۔ شعبۂ سیاسیات کی صدر پروفیسر نگار زبیری نے خطبۂ استقبالیہ پیش کیا۔ ڈاکٹر آفتاب عالم اور ڈاکٹر محب الحق نے بھی اظہار خیال کیا۔ ڈاکٹر اکبر چودھری نے نظامت کی۔ ڈاکٹر عادل غزنوی نے شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر نغمہ فاروقی، ڈاکٹر فرحانہ کوثر، ڈاکٹر اقبال الرحمان، ڈاکٹر اسلم، ڈاکٹر راحت، ڈاکٹر فِزّہ حیدر، ڈاکٹر مصاحب، ڈاکٹر مرتضیٰ اور دیگر افراد موجود رہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *