کیا کل انتخابی نتائج وقت پر آئیں گے

Share Article


پانچ ریاستوں میں ہونے والے انتخابات کا سب کو شدت سے انتظار ہے۔لوگ یہ دیکھنا چاہتے ہیں کہ 2019 کے سیمی فائنل کے طور پر سمجھے جانے والے یہ انتخابی نتائج کیا آتے ہیں ۔مگر آپ کی جانکاری میں اس بات کا رہنا ضروری ہے کہ اس مرتبہ نتائج آنے میں تاخیر ہوسکتی ہے ۔ وجہ یہ ہے کہ الیکشن کمیشن نے کانگریس کی وہ مانگ مان لی ہے جس میں اس نے ہر راؤنڈ کے بعد نتائج کی جانکاری تحریر میں دینے کی بات کی تھی۔ اتنا ہی نہیں ، یہ سرگرمی ان پانچوں ریاستوں میں یعنی مدھیہ پردیش،راجستھان، چھتیس گڑھ تلنگانہ اور میزورم میں بھی لاگو ہوں گے۔
ہر راؤنڈ کے نتائج کے اعلان کے بعدہی دوسرے دور کے لئے ای وی ایم مشینوں کو اسٹنگ روم سے نکالی جائیں گی۔ ہر اسمبلی حلقے میں 14ٹیبل لگاکر گنتی کی جائے گی اور الگ الگ اسمبلی حلقے میں16سے 20راؤنڈ میں گنتی ہوگی ۔ہر راؤنڈ کی گنتی اور پھر اس کے نتائج کا اعلان کرنے میں آدھا سے پون گھنٹے لگ سکتا ہے۔ ایسے میں سمجھا جاسکتا ہے کہ پوری گنتی میں دس گھنٹے سے زیادہ کا وقت لگے گا۔صادف ہے کہ اس وجہ سے حتمی نتیجے کافی دیر سے آنے کا امکان ہے۔ مطلب یہ ہے کہ کل دیر سے پتہ چل سکے گا کہ ان ریاستوں میں سنگھاسن کا تاج کس کے سرپر سجے گا اور کون اقتدار سے باہر رہے گا۔ ویسے ان اسمبلی انتخابات کو آئندہ عام انتخابات کے لئے پیش خیمہ کے طورپر مانا جاتا ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ کس کی جیت ہوتی ہے اور کس کی ہار۔ ویسے مقابلہ تو دو پارٹیوں کے درمیان ہی ہے یعنی کہ کانگریس اور بی جے پی ۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *