ہرعام یا خاص آدمی کا واسطہ کبھی نہ کبھی کسی سرکاری محکمہ سے ضرور پڑتا ہے، خواہ وہ راشن کارڈ بنوانے کے لئے ہویا پاسپورٹ بنوانے کے لئے۔ آپ چاہے شہر میں رہتے ہوں یا گاؤں میں، بابوؤں کے ذریعہ فائل دبانے اور فائل آگے بڑھانے کے لئے رشوت کے مطالبے سے آپ سبھی کا سامنا ضرور ہوا ہوگا۔ گاؤں میںضعیفوں کو پنشن کے لئے بزرگوں کو کتنی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اس کا اندازہ لگانا بھی مشکل ہے۔ شہروں میں بھی لوگوں کو عمر، پیدائش، موت اور رہائشی سرٹیفکٹ بنوانے  یا انکم ٹیکس ریفنڈ لینے میں ناکوں چنے چبانے پڑتے ہیں۔ اس کے علاوہ کام کرانے کے لئے رشوت بھی دینی پڑتی ہے۔ اب سوال یہ ہے کہ جو آدمی رشوت دینے کی پوزیشن میں نہیں ہے تو کیا اس کا کام نہیں ہوگا؟ ایسا نہیں ہے، اس کا کام ضرور ہوگا، وہ بھی رشوت دئے بغیر۔ ضرورت ہے صرف اپنے حق کا استعمال کرنے کی اور وہ حق ہے ’حق اطلاعات‘۔یہ حق ایک قانون ہے ۔ محض ایک درخواست دے کر آپ رشوت خور افسران کی نیند حرام کرسکتے ہیں۔ یہ آزمودہ اور کامیاب نسخہ ہے۔ جیسے ہی آپ اپنے رکے ہوئے کام سے متعلق ایک آرٹی آئی درخواست ڈالتے ہیں، بدعنوان اور رشوت خور افسروں اور بابوؤں کی سمجھ میں آجاتا ہے کہ جسے وہ پریشان کررہے ہیں، وہ عام آدمی تو ہے، لیکن اپنے حقوق اور ضابطوں کے تئیں بیدار بھی ہے۔ یقین مانئے، سرکاری محکموں میں انہیں لوگوں کو زیادہ پریشان کیا جاتا ہے، جنہیں اپنے حقوق کی معلومات نہیں ہے۔ حق اطلاعات قانون میں اتنی طاقت ہے کہ چھوٹے موٹے کام تو درخواست دینے کے ساتھ ہی ہوجاتے ہیں۔ اس لئے یہ ضروری ہے کہ رشوت دینے کے بجائے آپ اپنے حق کا استعمال کرکے اپناکام کرائیں۔ چوتھی دنیا آپ کے ہر قدم پر آپ کا ساتھ دینے کو تیار ہے۔ کوئی بھی مسئلہ ہو، کوئی بھی مشورہ چاہئے یا آپ اپنا تجربہ ہمارے ساتھ شیئر کرنا چاہتے ہوں تو ہمیں خط لکھیں یا ای میل کریں۔ ہم آپ کی مدد کے لئے ہمیشہ تیار ہیں۔
درخواست کا خاکہ
(کسی بھی سرکاری محکمہ میں رکے ہوئے کام کے لئے جیسے راشن کارڈ، عمر، پیدائش، موت اور رہائشی سرٹیفکٹ بنوانے یا ضعیفی کی پنشن پانے، انکم ٹیکس ریفنڈ ملنے میں تاخیر ہونے، رشوت طلب کرنے یا بلاوجہ پریشان کرنے کی صورت میں مندرجہ ذیل سوالوں کی بنیاد پر حق اطلاعات کے تحت درخواست)

سرکاری فائل کے جائزے سے متعلق عرضی نامہ

مؤرخہ
بخدمت،
پبلک انفارمیشن افسر
دفتر کانام …………………..                پتہ………………………….
ریفرنس: حق اطلاعات قانون 2005کے تحت درخواست
عزت مآب،
میں نے آپ کے محکمہ میں ………….تاریخ کو………کے لئے درخواست دی تھی (درخواست کی کاپی منسلک کریں)، لیکن اب تک میری درخواست پر اطمینان بخش قدم نہیں اٹھایا گیا ہے۔
براہ کرم اس تعلق سے مندرجہ ذیل معلومات فراہم کرائیں۔
1-    میری درخواست پر کی گئی کارروائی نیزیومیہ پیش رفت کی رپورٹ دستیاب کرائیں۔ میری درخواست کن کن افسروں کے پاس گئی اور کس افسر کے پاس کتنے دنوں تک رہی اور اس دوران ان افسروں نے اس پر کیا کارروائی کی؟ پوری تفصیل فراہم کرائیں
2-     محکمہ کے ضابطے کے مطابق میری درخواست پر زیادہ سے زیادہ کتنے دنوں میں کارروائی مکمل ہوجانی چاہئے تھی؟ کیا میرے معاملہ میں مذکورہ معینہ وقت پر عمل کیا گیا ہے؟
3-     براہ کرم ان افسروں کے نام اور عہدے بتائیں، جنہیں میری درخواست پر کارروائی کرنی تھی، لیکن انہوں نے کوئی کارروائی نہیں کی۔
4-     اپنا کام ٹھیک طریقے سے نہ کرنے اور عوام کو پریشان کرنے والے ان افسروں کے خلاف کیا کارروائی کی جائے گی؟ یہ کارروائی کب تک کی جائے گی؟
5-     اب میرا کام کب تک پورا ہوگا؟
(اضافی سوالات ،اگر ضروری ہوں)
6-     براہ کرم مجھے ان تمام درخواست ؍ ریٹرن؍ عرضی؍ شکایت کی فہرست دستیاب کرائیں، جنہیں میری درخواست؍ ریٹرن؍ عرضی؍ شکایت کے جمع ہونے کے بعد جمع کیا گیا۔ فہرست میں مندرجہ ذیل اطلاعات درج ہونی چاہئیں۔
(الف) درخواست دہندہ؍ ٹیکس دہندہ؍ عرضی گزار؍ متاثرہ کا نام            (ب)رسید نمبر
(ج)     درخواست؍ ریٹرن؍ عرضی؍شکایت کی تاریخ            (د) کارروائی کی تاریخ
7-     براہ کرم ریکارڈ کے اس حصے کی کاپی دیں، جس میں مذکورہ درخواست ؍ ریٹرن؍ عرضی؍شکایت کی رسید کا بیورا ہو۔
8-    میری درخواست کے بعد اگر کسی درخواست دہندہ؍ ریٹرن؍ عرضی؍شکایت کو نمبر آنے سے پہلے تصفیہ کیا گیا ہو تو اس کی وجہ بتائیں۔
9-     اس درخواست دہندہ؍ ریٹرن؍ عرضی؍شکایت کا نمبر آنے سے پہلے کاعمل ، اگر کوئی ہو، تو کب تک معلومات کی جائے گی؟
میں درخواست فیس کے طور پر 10روپے الگ سے جمع کررہا ہوں؍ کررہی ہوں

دستخط:            نام:                پتہ:

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here