گاؤں راجلوگڑھی میں شوہر اور بیوی کی آپس میں کہا سنی ہونے سے شادی شدہ نے عاشق کے ساتھ مل کر شوہر کے قتل کی سازش رچی۔ مگر کزن سسر بے موت مارا گیا۔
 
پولیس نے لاش کو قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے سول اسپتال میں بھیج دیا۔
 
مقتول کے والد رامدھاری نے بتایا کہ اس کا بیٹا سنجے گروگرام میں رہتا ہے، وہ جمعہ کو آبائی گاؤں راجلوگڑھی آیا ہوا تھا۔ وہ اپنے بھتیجے نریندر کے ساتھ سویا ہوا تھا۔ گاؤں میں ان کے خاندان کا کوئی رکن نہیں رہتا ہے، وہ خود بھی سونی پت میں رہتے ہیں۔ اس کے بھتیجے نریندر کی بیوی انو نے جمعہ کی رات اپنے عاشق کے ساتھ تیزدھار ہتھیار کے ساتھ نریندر پر حملہ کیا تھا، لیکن سنجے بچاؤ کر رہا تھا تو تبھی اس پر انو اور اس عاشق نے حملہ بول دیا۔ سنجے کو علاج کے لئے فوری طور پر سی ایچ سی گنور میں داخل کرایا گیا، جہاں پر ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا۔
 
مقتول سنجے اپنے خاندان کے ساتھ گروگرام میں رہتا ہے، اپنی بیوی چنچل اور دو بیٹی مونا اور سونا ساتھ رہتی ہیں۔گنور تھانہ انچارج دنیش کمار کے مطابق مقتول کے بھتیجے نریندر نے پولیس سے کی شکایت میں بتایا کہ اس کی بیوی انو کے کلدیپ ساکن دیہہ کے ساتھ غیر قانونی تعلقات ہیں۔ جمعہ کی رات قریب 10 بجے اس کی بیوی اور اس کے درمیان کہا سنی ہو گئی تو اس نے فون کرکے اپنے عاشق کلدیپ کو بلا لیا۔ کلدیپ کے ساتھ بہت سے لوگ ہتھیاروں کے ساتھ آئے اور ان پر حملہ بول دیا، جس میں اس کے چچا سنجے کی موت ہو گئی۔
 
ہفتہ کو تھانہ انچارج نے بتایا کہ پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کراکر رشتہ داروں کے حوالے کر دیا ہے۔خاتون اور اس کے عاشق کے خلاف مقدمہ درج کر تحقیقات شروع کر دی ہے۔ دو ملزم ابھی فرار ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here