چوکیدار کے ساتھ بھاگنے والی سیاسی خاتون کون ہیں؟

Share Article


اب سیاست داں یا سیاست سے جڑے ہوئے لوگ کسی بھی موضوع پر بحث کرتے ہیں تو مدعا پر کم اور ذاتیات پر زیادہ کرتے ہیں۔ گزشتہ دنوں پانچ ریاستی اسمبلیوں کے دوران یہ نمونے خوب دیکھنے کو ملے۔ تب لگتا تھاکہ یہ عادت صرف ہمارے ملک کے لیڈروں کی ہے مگر جب ایک چینل پر پاکستانی سیاست دانوں کو بات کرتے ہوئے سنا تو محسوس ہوا کہ دونوں ملک کی سرحدیں ضرور بٹی ہوئی ہیں مگر سیاست دانوں کی زبانیں یکساں ہی ہیں اوردونوں ملکوں کے لیڈران بحث کے دوران ایشو سے زیادہ ذاتیات کو نشانہ بناتے ہیں۔
پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا افضل کا نجی ٹی وی چینل کے ایک پروگرام میں بات کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ’ عمران خان جیسا کرپٹ آدمی جو ناجائز بچی کا باپ ہے وہ کس قانون کے تحت وزیراعظم بنا ہوا ہے‘۔رانا افضل کی اس بات پر پی ٹی آئی رہنما جمشید اقبال چیمہ غصے میں آگئے اور جواباََ پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز پر ذاتی حملہ کیا اور کہا کہ’ آپ کی لیڈر تو خود بھاگی ہوئی ہے۔‘جمشید اقبال چیمہ نے کہا کہ آپ کو بھی شرم آنی چاہئے کہ ’ آپ کی لیڈر اپنے چوکیدار کے ساتھ بھاگی ہوئی ہے‘۔جس کے بعد دونوں میں تکرار شروع ہو گئی۔
اسی طرح ایک دوسری کانفرنس میں پاکستانی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے مسلم لیگ کے رہنما رانا ثناء اللہ پر تنقید کرتے ہوئے انہیں ’بدبودار آدمی کہہ دیا‘ اور کہا کہ ان سے متعلق بات کرنے کے لیے رومال ساتھ رکھنا ضروری ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *