سہاگ رات میں شوہرنے لوہے کی راڈ سے کیاریپ،بیوی کی موت

Share Article
rape
پڑوسی ملک پاکستان میں ایک شرمناک درندگی کا معاملہ سامنے آیاہے۔ جہاں نکاح کے بعد سہاگ رات میں ایک شخص نے اپنی بیوی کے ساتھ لوہے کی راڈ سے ریپ کیا۔بری طرح زخمی ہوئی نئی نویلی دلہن کی رسیپشن کے دن موت ہوگئی۔ ایک اسپتال کی ڈاکٹرنے اس معاملے کی جانکاری سوشل میڈیاٹویٹرکے ذریعہ لوگوں تک پہنچائی۔اس معاملے کی جانکاری ملتے ہی سوشل میڈیاپرلوگوں کا غصہ پھوٹ پڑا۔خبرہے کہ اس شرمناک واقعہ کوانجام دینے والے ملزم کی دماغی حالت خراب بتائی جارہی ہے۔متاثرہ خاندان کی تحریرپرپولس کیس درج کرکے معاملے کی جانچ میں لگ گئی ہے۔
قابل توجہ ہے کہ فاطمہ شیرین ایک ڈاکٹرہیں انہوں نے ہی اس معاملے کولیکرگذشتہ 13جنوری کوٹویٹ کئے تھے۔ انہو ں نے ٹویٹ کرتے ہوئے بتایاتھاکہ ان کے ایک مریض کی زیادہ خون بہنے کی وجہ سے موت ہوگئی کیونکہ اس کے زخم کافی گہرے تھے۔ متاثرہ کے والدکوپوسٹ مارٹم کیلئے تیارکرلیاگیا۔اس لڑکی کا شوہردماغی طورسے بیمارہیں جس نے اس کے جسم میں لوہے کی راڈ سے ریپ کیا۔اگلے ٹویٹ میں ڈاکٹرفاطمہ نے بتایاکہ اپنی سہاگ رات پرریپ کاشکارہوئی متاثرہ لڑکی کی موت اس کے رسپشن کے دن ہوئی تھی۔ لوہے کی راڈ کے ذریعہ ریپ میں اس کی جان گئی ہے۔آگے ڈاکٹرفاطمہ نے معاشرہ پرسوال اٹھاتے ہوئے کہاکہ ہم اپنے بچوں کوسیکس کے بارے میں کیوں بیدارنہیں کرتے ہیں؟ ہمارے سماج کوچولوبھرپانی میں ڈوب مرناچاہئے۔پولس میں یہ کیس تودرج ہوالیکن کورٹ کے حکم پرعمل نہیں کیاجارہاہے۔ معاف کردیاہوگا۔ملزم شخص کے والدبھی اسے معاف کرنے کیلئیسوچ رہے ہوں گے۔
بہرکیف ٹویٹر پرجب لوگوں کواس بارے میں پتہ لگاتوانہو ں نے اس واقعہ سخت مذمت کی۔ ایک یوزروقارکیوکاکہناہے کہ لوگ سچ میں پاگل ہوگئے ہیں۔ مجھے سمجھ نہیں آرہاہے کہ کیاکہوں۔ماں باپ تونوکری کرنے توسیکھاتے ہیں لیکن انسان نہیں بناتے ہیں، رحم کرنانہیں سکھاتے ہیں۔وہیں ایک یوزرنے اس معاملے پرکہاکہ یہ وقت اپنے بیٹوں کوخواتین کی عزت کرناسکھانے کاہے، ہمارا فرض بیٹیوں کی زندگی پردھیان دیناہے لیکن بیٹوں کونہیں سکھاتے کہ خواتین کی کس طرح عزت کی جائے۔ایک اوریوزرونے پردھیونامی کہاکہ میرے پاس الفاظ نہیں ہیں۔ایسے حیوان صفت لوگوں کوبنارحم کئے بیچ سڑک پرلٹکادینا چاہئے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *