ہم سمجھتے ہیں ایک دوسرے کی تشویش، اختلافات کو تنازعہ نہیں بننے دیں گے: پی ایم مودی

Share Article

بھارت دورے پر آئے چین کے صدر شی ژنپنگ کا ہفتہ کے روز دوسرا دن ہے۔ آج شی ژن پنگ اور وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان تاج فشرمین کے کووریزارٹ میں سربراہ مذاکرات ہوئے۔ یہ مذاکرات تقریباً ایک گھنٹے تک چلے ۔ اس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان وفد سطح کی بات چیت ہوئی۔

اس بات چیت میں وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ہم ایک دوسرے کے خدشات کو سمجھتے ہیں۔ اختلافات کو تنازعہ نہیں بننے دیں گے۔ ہمارے تعلقات عالمی امن کی مثال ہیں۔ بھارت اور چین کے درمیان ثقافتی تعلقات ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان اور چین کے تعلقات کا گواہ ہے چنئی، جہاں سے دونوں کے درمیان ایک نیا باب شروع ہو جائے گا۔

چین کے صدر شی ژن پنگ نے ہندوستان میں ہوئے استقبال پر خوشی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ میں بھارت کے استقبال کے ساتھ بہت خوش ہوں۔ یہ دورہ یادگار رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اور چین خاص پڑوسی ہیں۔ اس مذاکرات سے تعلقات میں گرماہٹ آئی ہے۔
اس بات چیت کے بعد وزیر اعظم مودی ظہرانے کی میزبانی کریں گے۔ اس کے بعد چین کے صدر چنئی کے لئے روانہ ہوں گے، جہاں سے تقریباً ڈیڑھ بجے وہ کھٹمنڈو کے لئے پرواز بھریں گے۔

اس سے قبل وزیر اعظم نریندر مودی نے آج صبح مہابلی پورم کے ساحل پر صفائی مہم چلائی اور لوگوں کو صاف صفائی کے تئیں بیدار رہنے کا پیغام دیا۔ پی ایم مودی نے کہا کہصاف صفائی ہی ہم لوگ صحت مند اور فٹ رہیں گے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *