دیہاتیوں نے انتخابات کا بائیکاٹ کیا، منانے میں لگے افسران

Share Article

 

لکھنؤ، 18 اپریل (ہ س)۔ لوک سبھا انتخابات کے دوسرے مرحلے میں مغربی اتر پردیش کی آٹھ سیٹوں پر پولنگ جاری ہے۔ سخت سیکورٹی کے درمیان ابھی تک ووٹنگ پرامن طریقے سے چل رہی ہے۔ اس دوران بعض مقامات پر پولنگ کے بائیکاٹ کی بھی خبریں آئیں، جس کا فوری طور پر نوٹس لیتے ہوئے افسر ان ووٹروں کو سمجھانے میں مصروف ہیں۔

 

Image result for boycotted the elections in up

 

ہاتھرس ڈسٹرکٹ کے شاہ آباد اسمبلی حلقہ کے گڑھی ہربل کے دیہاتیوں نے ترقیاتی کاموں کو نظر انداز کرنے کا الزام لگاتے ہوئے صبح ووٹنگ نہ کرنے کا اعلان کر دیا۔ ساڑھے نو بجے تک ایک بھی ووٹ نہیں پڑا ہے۔ بوتھوں پر ووٹرز نہ ہونے پر انتظامیہ کے ہوش اڑ گئے اور دیہاتیوں کو منانے کے لئے ضلع انتظامیہ کے افسران گاؤں پہنچ گئے۔ دیہاتیوں کا کہنا ہے کہ ان کے گاؤں میں ایک بھی ترقیاتی کام نہیں ہوا ہے۔ سڑکوں پر گڑھے ہیں۔ پانی کی قلت اور بجلی بھی بہت کم آتی ہے۔ان مسائل کو دیکھتے ہوئے ہم ووٹنگ نہیں کریں گے۔ وہیں دیہاتیوں کو ووٹنگ کے لئے افسران منانے میں لگے ہوئے ہیں۔ اسی طرح فتح پور سیکری کے شمش آباد کے گاؤں نگلا شادی میں دیہی باشندوںنے انتخابات کا بائیکاٹ کر دیا۔ دیہاتیوں نے گاؤں میں ترقیاتی کام نہ ہونے پر پولنگ نہیں کرنے کی بات کہی۔ اطلاع ملتے ہی ضلع الیکشن افسر نے دیہاتیوں کو منانے کے لئے سیکٹر مجسٹریٹ کو بھیجا۔ حکام نے دیہاتیوں کے مسائل کو حل کرنے کی بات کہی۔ اس کے بعد دیہیباشندے مان گئے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *