کھلی جگہوں پر نمازپڑھنے پرروک،پولس نے جاری کی نوٹس 

namaz-demo-pic
قومی راجدھانی دہلی سے متصل اترپردیش کے نوئیڈا میں کھلی جگہ میں نمازپڑھنے پرپولس نے پہرالگادیاہے۔نوئیڈا کے ایس ایس پی نے یہاں کی بڑی بڑی کمپنیوں کوخط بھیج کر کہاہے کہ اگران کے مسلم ملازمین جمعہ کوپارک جیسی عوامی جگہوں پرنمازپڑھتے ہیں تو اس کیلئے کمپنی کوقصوروارمانا جائے گا۔ نوئیڈا پولس کی دلیل ہے کہ 2019کے لوک سبھا الیکشن سے پہلے اس طریقے کی پبلک میٹنگ سے فرقہ وارانہ ہم آہنگی بگڑسکتی ہے۔نوئیڈا پولس نے کمپنیوں سے کہاہے کہ وہ اپنے ملازمین کومسجد، عیدگاہ یادفتراحاطے کے اندرہی نمازپڑھنے کیلئے کہیں۔
نوٹس کے مطابق، اگرحکم کی خلاف ورزی ہوئی یا دفتروں کے ملازمین ضابطے کی خلاف ورزی کرتے پائے گئے تواس کیلئے کمپنیاں قصوروارمانی جائیں گی۔نوئیڈا کے سیکٹر58پولس نے انڈسٹریل ایریا میں آنے والے نوئیڈا اتھارٹی کے پارک میں کھلے میں نماز پڑھنے پرروک لگادی ہے۔اس کے لئے پولس نے انڈسٹریل ایئریاکی سبھی کمپنیوں کونوٹس بھیجاہے۔
نوئیڈاکی کمپنیوں نے اس معاملے پرپولس کے اعلیٰ افسروں سے بات چیت کی مانگ کی ہے۔وہ ملازمین کے ذریعے حکم کی خلاف ورزی پرخودکوذمہ دارٹھہرانے پرگفتگوچاہتے ہیں۔نوئیڈاسیکٹر 58کے تھانہ انچارج پنکج رائے نے کہاکہ ہمیں کچھ دنوں سے پارکوں میں نمازپڑھے جانے کی شکایت مل رہی تھی۔اسلئے ہم نے اپنے علاقے کی کچھ کمپنیوں کونوٹس بھیجے ہیں۔
قابل ذکرہے کہ اس سال کی شروعات میں ہریانہ کے گروگرام(گڑگاؤں) میں سنیوکت ہندوسنگھرش سمیتی نے دس جگہوں پرجمعہ کی نماز پڑھنے پرنے مخالفت کی تھی اورانتظامیہ سے ان دس مقامات پرجمعہ کی نمازکی ادائیگی پرپابندی لگانے کا مطالبہ کیاتھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *