پے کمیشن کو لے کر تحریک التوا کی پیشکش پر بحث کا مطالبہ قبول نہیں کئے جانے پر اپوزیشن اراکین اسمبلی نے اسمبلی میں جمعرات کے روزجم کر ہنگامہ کرنے کے بعد ایوان سے واک آؤٹ کیا۔
جمعرات کو کانگریس اور سی پی ایم ممبران اسمبلی نے پے کمیشن کے مطالبے پرتحریک التوا کی پیشکش لانا چاہا۔ اسمبلی اسپیکر ومان بنرجی نے کہا کہعموماً اسمبلی سیشن میں اس طرح کی تجویز پر بحث نہیں ہوتی ہے لیکن میں پیشکش کو پڑھنے کی اجازت دے رہا ہوں۔ اس کے بعد اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما عبدالمنان کھڑے ہوئے اور پیشکش پڑھنا شروعکی جس کے بعد اپوزیشن رکن اسمبلی اس پر بحث کا مطالبہ کرنے لگے جس کی صدر نے اجازت نہیں دی۔
اسی کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ممبر اسمبلی اسپیکر کی کرسی کے سامنے ویل میں اتر گئے۔ سی پی ایم اور کانگریس کے رکن اسمبلی مسلسل نعرے بازی کر رہے تھے جس کی وجہ سے اسمبلی کی سیکورٹی نے فوراً صدر ومان بنرجی کے ارد گرد سیکورٹی گھیرا بنایا۔ سی پی ایم رکن اسمبلی تنمے بھٹاچاریہ نے پوچھا کہ اس طرح سے حفاظتی گھیرا بنانے کا کیا مطلب ہے، لیکن صدر نے اس پر کوئی ردعمل نہیں دیا جس کے بعد سی پی ایم اور کانگریس کے ممبران اسمبلی نے اسمبلی سے واک آئوٹ کیا۔ باہر نکل کر یہ لوگ عبدالمنان، منوج چکرورتی، است مترا، نیپال مہتو جیسے کانگریس کے ممبران اسمبلی اور سی پی ایم پارٹی اراکین کے لیڈر سجن چکرورتی، سابق وزیر اور سینئر ممبر اسمبلی وشوناتھ چودھری جیسے بائیں بازو ممبر اسمبلی سرکاری ملازمین کے بقایا مہنگائی بھتہ دینے، پے کمیشن کی سفارشات لاگو کرنے وغیرہ کے مطالبے پر نعرے لگا رہے تھے۔ حالانکہ کچھ دیر بعد یہ تمام ایوان میں واپس آ گئے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here