اناؤ ریپ کیس: ایمس میں شروع ہوئی خاص کورٹ کی کارروائی، متاثرہ کے درج کئے جا رہے ہیں بیان

Share Article

نئی دہلی: اناؤ ریپ کیس کی متاثرہ کا بیان آج سے ریکارڈ کیا جائے گا۔ اس کے لئے ہسپتال میں ہی خصوصی عدالت بیٹھے گی۔ جج سماعت کے لئے ایمس میں پہنچ چکے ہیں۔ متاثرہ کا بیان بند کمرے میں ریکارڈ کیا جائے گا۔وہیں، ملزم ششی سنگھ اور کلدیپ سینگر کی پیشی بھی ہوئی ہے۔متاثرہ کے بیان درج کرنے کے بعد ملزمان سے کراس سوالات بھی ہوں گے۔ رائے بریلی کے پاس ہوئی حادثے کے بعد متاثرہ ایمس میں علاج کروا رہی ہیں۔ اسی وجہ سے عدالت نے ایمس میں عارضی کورٹ بنا کر بیان درج کرانے کا حکم دیا تھا۔ اس معاملے میں بی جے پی ممبر اسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر ملزم ہیں۔

Image result for Unnao rape case: Special court proceedings started in AIIMS, statements of victim are being recorded

جج نے ہفتہ کو ایمس کے جے پرکاش نارائن سپریم ٹراما سینٹر میں ایک عارضی عدالت قائم کرنے کی ہدایت کی گئی، جہاں عورت کو 28 جولائی کو ایک حادثے کے بعد داخل کرایا گیا تھا۔ ہائی کورٹ نے اس معاملے میں جمعہ کو اجازت دی تھی۔ہائی کورٹ نے جمعہ کو انتظامی طرف سے اس ارادے کی ایک نوٹیفکیشن جاری کیا، جس میں کہا گیا کہ معاملے کی سماعت کر رہے اسپیشل جج شرما متاثرہ کے بیان درج کریں گے۔

Image result for Unnao rape case

خاتون نے 2017 میں سینگر پر اس کے ساتھ مبینہ طور پر عصمت دری کرنے کا الزام لگایا تھا۔ واقعہ کے وقت وہ نابالغ تھی۔ 28 جولائی کو اترپردیش کے رائے بریلی میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوئی متاثرہ فی الحال زندگی کے لئے جنگ رہی ہے۔ اس حادثے میں اس کی خالہ اور چاچی دونوں کی موت ہو گئی تھی۔ حادثے میں ان کا وکیل بھی زخمی ہو گیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *