لاکھوں بینک ملازمین آج سے 2دن کی ہڑتال پر

Share Article
bank-protest
سرکاری بینکوں کے ہزاروں ملازمین اور افسران نے آج اورکل یعنی30اور 31 مئی کودودن کی ہڑتال پر ہیں۔کروڑوں سرکاری ملازمین کے ساتھ ساتھ پرائیویٹ سیکٹر میں کام کرنے والے لوگوں پربھی اس کا اثرپڑسکتاہے۔دعویٰ کیاجارہاہے کہ ہڑتال میں قریب میں 10لاکھ بینک ملازمین شامل ہورہے ہیں۔بینک ملازمین اپنی سیلری کی صرف دوفیصدی اضافے کی تجویزسے بیحدناراض ہیں۔
بہرحال اس سے ملک بھر میں بینکنگ سروسز بری طرح متاثر ہو سکتی ہیں۔بزنس اور انڈسٹری پر بھی اس کا برا اثر پڑنے کا اندیشہ ہے۔،لک کے سب سے بڑے بینک ایس بی آئی نے قبول کیا ہے کہ ہڑتال کا اثر بینکنگ خدمات پر ہوگا۔بینک یونینوں نے ہڑتال کا اعلان تنخواہ میں دو فیصدی کے اضافہ کی تجویز کی مخالفت میں کیا ہے۔بینک یونینوں کے مطابق ،انڈین بینک ایسو سی ایشن (آئی بی اے) نے ان کی تنخواہ میں محض 2 فیصدی اضافے کی تجویز رکھی ہے۔جسے 5 مئی کو ہوئی آئی بی اے کی میٹنگ میں لایا گیا تھا۔اس میں 31 مارچ 2017 تک ویج بلکاسٹ میں2 فیصد کے اضافے کی فراہمی ہے لیکنبینک یونین نے اس تجویز کی مکالفت کی ہے۔
بہرحال مہینے کے آخرکے دن ہونے کے چلتے لوگوں کے تنخواہ آنے پربھی اس کا اثرپڑسکتاہے،جس میں عام لوگوں کوپریشانیوں کا سامنا کرناپڑسکتاہے۔ہڑتال کی وجہ سے کئی بینکوں کے شاخاؤں کے کام وغیرہ پرتواثرپڑے گاہی لیکن اے ٹی ایم سروس پربھی اثرپڑسکتاہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *