ڈونالڈ ٹرمپ کا مودی کو بڑا جھٹکا: ہندوستان سے ٹیکس چھوٹ ختم کر سکتا ہے امریکہ

Share Article

modi-and-trump

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے ہندوستان کے ساتھ جی ایس پی (جینرلائزڈ سسٹم آف پریفرینس) ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ٹرمپ نے اس کی اطلاع اپنے پارلیمنٹ کو دے دی ہے۔ بھارت کے علاوہ ترکی بھی ہے جس کے ساتھ امریکہ یہ کاروباری تعلقات توڑ رہا ہے۔ ٹرمپ کے اس فیصلے کی معلومات امریکی ٹریڈ رپریزنٹیٹو رابرٹ لاٹجر نے دی ہے۔

ڈونالڈ ٹرمپ نے اس کے ساتھ ہندستان میں کئی امریکی پروڈکٹس پر لگنے والے بیحد اونچے ٹیکس امپورٹ کی ایک بار پھر تنقید کی ہے۔ ہندستان کو بیحد اونچے ٹیکس شرح کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے ٹرمپ نے کہا کہ وہ ہندستانی پروڈکٹس پرٹیکس لگانا چاہتے ہیں۔

ٹرمپ نے پارلیمانی لیڈران کیلئے ایک خط میں کہا، ’میں یہ قدم اس لئے اٹھا رہا ہوں کیونکہ امریکہ اور ہندستان حکومت کے درمیان گہرا جڑاؤ کے بعد میں نے مقرر کیا ہے کہ ہندستان نے متحدہ ریاست کو یہ بھروسہ نہیں دیا ہے کہ وہ ہندستان کے بازاروں میں برابر اور مناسب پہنچ حاصل کرے گا۔‘

ہندوستان اور ترکی پر کتنا اثر؟

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اپنے فیصلے سے پہلے کہا کہ بھارت نے ہمیں اس بات کو لے اس بات پر یقین نہیں کرایا کہ وہ اپنے بازار میں بھی ہمارے پروڈکٹ کی پہنچ کہاں تک اور کتنا آسان بنائے گا۔ ترکی کے بارے میں ٹرمپ نے کہا کہ وہاں کی اقتصادی ترقی دیکھ کر اسے ترقی پذیر ممالک کے زمرے میں نہیں رکھ سکتے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *