ترنمول کانگریس کی ایک اور ممبر اسمبلی نے بی جے پی میں جانے کا اشارہ دیا

Share Article

 

کولکاتہ، لوک سبھا انتخابات میںکامیابی کے بعد بی جے پی ترنمول کانگریس کو کمزو رکرنے میں مصروف ہے۔ اب تک ترنمول کے 11 رکن اسمبلی بی جے پی میں شامل ہو چکے ہیں۔ اب بانکوڑہ کی ممبر اسمبلی سنپا دریپا کے بھی بی جے پی میں شامل ہونے کی بحث ہے۔ذرائع کے مطابق جلد ہی وہ بھی بی جے پی میں شامل ہونے والی ہیں۔ دراصل سنپا نے 2016 میں کانگریس کی ٹکٹ پر جیت درج کی تھی اور انتخابات کے نتائج آنے کے فوری بعد مکل رائے کا ہاتھ پکڑ کر ترنمول کانگریس میں چلی گئی تھیں۔اب ان کا ایک بیان سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے ترنمول کی اعلی قیادت سے ناراضگی ظاہر کی ہے۔ یہاں تک کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی پر بھی انہوں نے وعدہ خلافی کا الزام لگایا ہے اور اپنی ناراضگی ظاہر کی ہے۔

 

Image result for Trinamool Congress MLA and indicated to the BJP west bengal

انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے ہمیں یقین دلایا تھا کہ بانکوڑہ لوک سبھا سے مجھے امیدوار بنایا جائے گا لیکن نہیں بنایا گیا۔ سی ایم نے مجھے بانکوڑہ میونسپل کارپوریشن کا چیئرمین بنانے کی یقین دہانی بھی دی تھی لیکن وہ بھی نہیں ہوسکا۔بار بار میرے ساتھ وعدہ خلافی کر کے مجھے ذلیل کیا گیا ہے۔ اپنے بیان میں سنپا نے کہا ہے کہ جب مکل رائے ترنمول کانگریس میں تھے تب ہم لوگوں کی تمام باتیں سنی اور پوری کی جاتی تھیں لیکن آج کوئی کسی کی بات نہیں سنتا۔ پارتھ چٹرجی (وزیر تعلیم)، فرہاد حکیم (کولکاتہ کے میئر اور ریاست کے شہری ترقی کے وزیر)، شبشوبھیندو ادھیکاری (نقل و حمل اور وزیر ماحولیات) سے میں نے اپنی پریشانیوںسے متعلق تفصیلی اطلاع وقتا فوقتا دیہے لیکن انہیں کوئی فرق نہیں پڑتا۔سنپاکے اس بیان کے بعد واضح ہو گیا ہے کہ ترنمول کانگریس سے ان کی ناراضگی ہے۔ بی جے پی میں جانے کے بارے میں بھی انہوں نے صورت حال کو واضح کیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *