ٹک ٹاک پرپابندی:گوگل نےTikTok App کو ہندوستان میں کیا بلاک،اب نہیں کر پائیں گے ڈاؤن لوڈ

Share Article

google-tik-tok

گوگل نے نوجوانوں میں مقبول ویڈیو ایپ ٹک ٹاک پراہم قدم اٹھایاہے۔دراصل گوگل نے مدراس ہائی کورٹ کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے ہندوستان میں بے حد مقبول ویڈیوا یپ ٹک ٹاک (TikTok) کو بلاک کر دیا ہے۔یعنی ویڈیو ایپ ٹک ٹاک کو گوگل نے پلے اسٹور سے ہٹادیاہے۔ لہٰذا اب گوگل کے پلے ا سٹور ایپ سے ٹک ٹاک ویڈیو ایپ کو ڈاؤن لوڈ نہیں کیا جا سکتا ہے۔حکومت ہند نے کل گوگل اوراپیل کو اپنے اپنے پلے اسٹورس سے ٹک ٹاک کوہٹانے کی ہدایت دی تھی۔ ٹک ٹاک کو لے کر یہ قدم اس فیصلے کے بعد آیا ہے جس میں ہائی کورٹ نے چین کی کمپنی Bytedance Technology کے اس درخواست کوخارج کر دیا تھا، جس میں کمپنی نے کورٹ سے ٹک ٹاک ایپ پر سے پابندی ختم کرنے کو کہا تھا۔

مدراس ہائی کورٹ نے 3 اپریل کو مرکز سے ٹک ٹاک پر پابندی لگانے کو کہا تھا۔ ساتھ ہی عدالت نے کہا تھا کہ ٹک ٹاک ایپ پورنوگرافی کو بڑھاوا دیتا ہے اور بچوں کو جنسی تشدد بنا رہا ہے۔ بتا دیں کہ ٹک ٹاک پر فحش مواد پروسنے کا الزام ہے۔
tik-tok
ٹک ٹاک ایپ پر یہ فیصلہ تب آیا جب ایک شخص نے اس پر پابندی کے لئے ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر کی۔ آئی ٹی کی وزارت کے ایک افسر کے مطابق، مرکز نے ہائی کورٹ کے احکامات پر عمل کرنے کیلئے Apple اور Google کو ایک خط بھیجا تھا۔ حکومت نے گوگل اور ایپل کو مدراس ہائی کورٹ کے اس حکم پر عمل کرنے کو کہا ہے جس میں مقبول موبائل ایپ ٹک ٹاک پر پابندی لگائیہے۔

قابل ذکر ہے کہ ٹک ٹاک موبائل ایپ دراصل ویڈیو بنانے کا ایک ایپ ہے جسے نوجوانوں میں کافی مقبولیت ملی ہے اورملک میں 104 ملین صارفین اس کا استعمال کررہے ہیں۔ ٹک ٹاک کی وباء4 ان دنوں نوجوانوں میں پھیل رہی ہے۔ ٹک ٹاک کے ویڈیوز دیکھنے والوں کے ساتھ اس پرویڈیوزاپ لوڈ کرنے کا جنون بھی نوجوان نسل میں بڑھتا جارہا ہے۔ دو دن پہلے ہی ٹک ٹاک پر ویڈیو بناتے ہوئے گولی چلنے سے ایک نوجوان کی موت ہوگئی تھی۔

ہندوستان میں ٹک ٹاک ایپ اب بھی ایپل کے پلیٹ فارم پر منگل دیر رات تک دستیاب تھا، لیکن Google کے پلے ا سٹور پر دستیاب نہیں تھا۔گوگل نے ایک بیان میں کہا کہ یہ اس ایپ پر تبصرہ نہیں کرتا ہے لیکن مقامی قوانین پر عمل کرتا ہے۔حالانکہ گوگل کے اس اقدام پر ٹک ٹاک کی جانب سے کوئی بیان نہیں آیا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *