16 گھنٹے کی میٹنگ کے بعد پرینکا نے کہا- میں نہیں، راہل کریں گے پی ایم مودی سے مقابلہ

Share Article
Priyanka
مشرقی اترپردیش کی انچارج پرینکا گاندھی نے انتخابی میدان میں پوری طاقت جھونک دی ہے۔ اترپردیش کے پارٹی دفتر نہرو بھون میں انہوں نے کارکنان کے ساتھ 16 گھنٹے کی میراتھن میٹنگ کی۔ یہ میٹنگ پوری رات چلی اور بدھ کی صبح 5:30 بجے ختم ہوئی۔
میٹنگ کے بعد نیوز 18 سے خاص بات چیت میں پرینکا گاندھی نے کہا کہ ان کا وزیر اعظم مودی سے مقابلہ نہیں ہوگا بلکہ راہل گاندھی پی ایم کو ٹکر دیں گے۔ پرینکا گاندھی نے منگل کی رات الگ الگ لوک سبھا حلقوں سے آئے پارٹی کارکنان سے ملاقات کی۔ میٹنگ کے بعد جب پرینکا سے پوچھا گیا کہ ان کا مقابلہ وزیر اعظم سے ہوگا ؟ تو اس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ’’میرسے نہیں ، راہل جی سے ان کا مقابلہ ہوگا۔ راہل لڑ تو رہے ہیں‘‘۔
پارٹی کارکنان کی میٹنگ کو لے کر انہوں نے کہا کہ یہاں کافی بدلاؤ کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ’’ میں تنظیم کے بارے میں سیکھ رہی ہوں ، میں لوگوں کی رائے سن رہی ہوں ، آخر الیکشن کیسا جیتا جائے ، اس پر بھی بات ہورہی ہے۔‘‘
اپنے شوہر رابرٹ واڈرا سے ای ڈی کی پوچھ تاچھ پر بھی پرینکا نے چپی توڑی۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ چیزیں چلتی رہیں گی ، میں اپنا کام کرتی رہوں گی ، مجھے بالکل بھی فرق نہیں پڑتا‘‘۔ بتادیں کہ ان دنوں رابرٹ واڈرا سے ای ڈی کی ٹیم مسلسل پوچھ تاچھ کررہی ہے۔ پہلے ای ڈی کے سامنے وہ دہلی میں پیش ہوئے تھے اوراب پھر جے پور میں ان سے پوچھ تاچھ چل رہی ہے۔

اس سے پہلے منگل کوانہوں نے کارکنان کوخطاب میں اندرونی لڑائی کوختم کرنے اورمتحدرہنے کی اپیل کی۔پرینکانے لکھنؤ اوراناؤ کے بیچ موہن لال گنج انتخابی حلقے میں مقامی لیڈروں سے کہا’گٹ بازی ختم کرو‘۔منگل کوہی کانگریس کے قومی صدر راہل گاندھی نے اترپردیش کے انچارجوں کے کام کا بٹوارا (تقسیم)کردیا۔کانگریس کی جنرل سیکریٹری اورمشرقی اترپردیش کی انچارج پرینکاگاندھی کویوپی کی 41لوک سبھا سٹیوں کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ دوسری طرف مغربی یوپی کے انچارج جیوتیرادتیہ سندھیا کو39سیٹوں کی ذمہ داری دی گئی ہے۔

 

 

 

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *