‘اسلام نہیں بلکہ یہ ہے زائرہ وسیم کے بالی ووڈ چھوڑنے کی اصل وجہ، بوائے فرینڈ کو سب معلوم تھا

Share Article

زائرہ وسیم نے جہاں ایک طرف ایکٹنگ چھوڑنے کے پیچھے اسلام کو بڑی وجہ بتایا ہے تو وہیں سابق مرکزی وزیر فاروق عبداللہ نے اس کے لئے زائرہ وسیم کے بوائے فرینڈ یا پھر ہونے والے شوہر کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔انہوں نے کہا کہ بالی ووڈ میں کام کرنے سے کوئی غیر مسلم نہیں بن جاتا ہے۔ دراصل دنگل گرل کے نام مشہور زائرہ نے گزشتہ اتوار انسٹاگرام پر ایک پوسٹ لکھ کر بالی ووڈ چھوڑنے کا اعلان کیا تھا۔اپنی پوسٹ میں انہوں نے لکھا تھا کہ 5 سال پہلے میں نے ایک ایسا فیصلہ لیا تھا، جس نے میری زندگی بدل دی۔ لیکن انہیں لگتا ہے وہ ایمان سے بھٹک گئی تھیں، اس لئے اب وہ ایکٹنگ چھوڑ رہی ہیں۔

Image result for zaira wasim

زائرہ وسیم کے ایکٹنگ چھوڑنے کے اعلان سے بالی ووڈ بھی حیران رہ گیا تھا تو وہیں خود زائرہ وسیم کے مداح کے لئے اس بات پر یقین کرنا مشکل ہو رہا تھا کہ اب وہ ان فلموں نے نہیں دیکھ پائیں گے۔سوشل میڈیا پر تمام طرح کی باتیں شروع ہو گئی تھی۔ تو وہیں اس سب کے درمیان فاروق عبداللہ کے بیان نے سب کو چونکا دیا۔ جيراً کے فیصلے کو غلط قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ زائرہ وسیم کا فلموں کو چھوڑنے کا فیصلہ درست نہیں ہے کیونکہ اسلام کافی لبرل مذہب ہے، یہ کسی کو کوئی بھی کام کرنے سے نہیں روکتا ہے۔

Image result for farooq abdullah

فاروق عبداللہ نے کہا کہ کیا پتہ زائرہ وسیم کے بوائے فرینڈ یا پھر ہونے والے شوہر نے انہیں فلمیں چھوڑنے کے لئے کہا ہو۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر میں انہیں کبھی ملوں گا تو ضرور کہوں گا کہ وہ کافی اچھا کام کر رہی تھیں۔

Image result for umar abdullah

وہیں دوسری طرف جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلی اور فاروق عبداللہ کے بیٹے عمر عبداللہ نے بھی زائرہ وسیم کے فیصلے کی تعریف کرتے ہوئے ٹویٹ کیا تھا۔ آپ اس ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ جايرا کے فیصلے پر تبصرہ کرنے سے ہم کون ہوتے ہیں، وہ اپنی زندگی کے ساتھ کیا کرنا چاہتی ہیں یہ ان کا ذاتی معاملہ ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *