سپریم کورٹ سے سابق آئی پی ایس افسر سنجیو بھٹ کو جھٹکا، درخواست مسترد

Share Article

 

سپریم کورٹ نے تین دہائی قبل حراست میں موت کے ایک معاملے میں ملزم گجرات کے سابق آئی پی ایس افسر سنجیو بھٹ کی کچھ اضافی گواہوں کو بلانے کی درخواست مسترد کر دی ہے۔

 

 

سنجیو بھٹ نے گجرات ہائی کورٹ کے حکم کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ سماعت کے دوران گجرات حکومت نے کہا کہ معاملے میں مقدمے کی سماعت پوری ہو چکی ہے اور ٹرائل کورٹ نے فیصلہ محفوظ رکھ لیا ہے۔ گجرات حکومت نے کہا کہ ٹرائل کورٹ 20 جون کو فیصلہ سنائے گا۔ لہٰذا اب گواہوں کو سمن کرنا ٹھیک نہیں ہوگا۔

 

کورٹ نے کہا کہ اب اس معاملے میں دوبارہ مقدمے کی سماعت شروع نہیں کی جا سکتی ہے۔ ہائی کورٹ نے سنجیو بھٹ کے اضافی گواہوں کو بلانے کے مطالبے کو مسترد کر دیا تھا۔ 1989 میں ایک ملزم کی بھٹ کی حراست میں موت ہو گئی تھی۔ اس وقت سنجیو بھٹ گجرات کے جام نگر میں اضافی پولیس سپرنٹنڈنٹ کے عہدے پر تعینات تھے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *