اجودھیا معاملے پر سپریم کورٹ میں سماعت ملتوی

Share Article

اجودھیا معاملے پر سپریم کورٹ میں آج سماعت نہیں ہوگی۔آج پانچ رکنی آئینی بنچ کے رکن جسٹس ایسے بوبڈے کے موجودنہیں ہونے کی وجہ سے یہ بنچ آج سماعت نہیں کرے گی۔ جسٹس بوبڈے کی طبیعت خراب ہے جس کی وجہ سے وہ آ نہیں پائے۔
آج رام للاکے وکیل سی ایس ویدناتھن آرکیا لاجیکل سروے آف انڈیا کی رپورٹ اور گواہوں کے بیانات پر اپنا موقف رکھنے والے تھے۔

گزشتہ 16 اگست کو ویدناتھن نے متنازعہ زمین کے نقشے اور فوٹو گراف کورٹ کو دکھائے تھے۔ ویدناتھن نے کہا تھا کہ کھدائی کے دوران ملے کھمبوں میں کرشن، شیوتانڈو، اور شری رام کے بال کی تصویر نظر آتی ہے۔ ویدناتھن نے کہا تھا کہ مسجد میں جہاں تین گنبد بنائے گئے تھے وہاں رام کی مورتی تھی۔ اپریل 1950 میں متنازعہ علاقے کے سروے میں بہت پکے ثبوت ملے تھے جو نقشے، مجسمے، راستے اور عمارتوں پر مشتمل ہے۔پری کرمامارگ کاپکا اور کچاراستہ بنا تھا۔ ویدناتھن نے کہا کہ مسجد میں انسان یا جاندارکی مورتیاں نہیں ہو سکتی ہیں۔ مساجداجتماعی یومیہ ہفتہ وار نماز کے لئے ہوتی ہیں۔

ویدناتھن نے کہا تھا کہ صرف نماز ادا کرنے سے وہ جگہ ان کی نہیں ہو سکتی۔ جب تک وہ اپنی جائیداد نہ ہو، نماز کہیں پر بھی پڑھ سکتے ہیں۔ نماز سڑکوں پر پڑھتے ہیں، اس کا مطلب یہ تو نہیں کہ سڑک آپ ہو گئی۔ اس پر مسلم وکیل راجیو دھون نے اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ کہیں پر بھی نماز ادا کرنے کی بات غلط ہے۔ یہ اسلام کی صحیح تشریح نہیں ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *