کرناٹک کے باغی چھ ممبران اسمبلی نے فریق بنانے کی عرضی دی

Share Article

 

کرناٹک کے باغی چھ ممبران اسمبلی نے آج سپریم کورٹ سے کل ہونے والی سماعت میں خودکو فریق بنانے کی کوشش کی۔ ان ممبران اسمبلی کی جانب سے سینئر وکیل مکل روہتگی نے آج چیف جسٹس رنجن گوگوئی کی صدارت والی بنچ کے سامنے درخواست کا تذکرہ کیا۔

 

گزشتہ 13 جولائی کو جن ممبران اسمبلی نے سپریم کورٹ میں عرضی دائر کی تھی، ان کی تعداد چھ تھی۔ پہلے یہ تعداد پانچ بتائی گئی تھی۔ ان ممبران اسمبلی کا بھی مطالبہ ہے کہ اسپیکر کو ان کا استعفیٰ قبول کرنے کی ہدایت دی جائے۔ مکل روہتگی نے کورٹ سے پہلے کے دس ممبران اسمبلی کی جانب سے دائر درخواست میں ترمیم کر دوبارہ دائر کرنے کی مانگ کی۔

 

گزشتہ 12 جولائی کو سپریم کورٹ نے کرناٹک میں اراکین اسمبلی کے استعفے کے معاملے میں فی الحال صورتحال برقرار رکھنے کا حکم دیا تھا۔ کورٹ نے 15 جولائی کو اگلی سماعت کرنے کا حکم دیا۔ اس وقت تک نہ استعفیٰ پر فیصلہ لیا جائے گا، نہ ممبران اسمبلی کی رکنیت کو نااہل قرار دیا جائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *