بیت المقدس کا فلسطینی گورنر ایک بار پھر اسرائیل کے ہاتھوں گرفتار

Share Article

 

قابض اسرائیلی فوج نے ایک بار پھر مقبوضہ بیت المقدس کے گورنر عدنان غیث کو گرفتار کر لیا ہے۔ یہ بات العربیہ کے نمائندے نے جمعرات کے روز بتائی۔خیال کیا جا رہا ہے کہ اس مرتبہ غیث کی گرفتاری اْن کے بدھ کے روز دیے گئے بیان کے باعث عمل میں آئی ہے۔ بیان میں غیث نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ فوری طور پر حرکت میں آئے تا کہ بین الاقوامی قوانین اور قراردادوں پر عمل درامد کے ذریعے بالعموم فلسطینی اراضی میں اور بالخصوص بیت المقدس میں اسرائیل کی جانب سے جاری خلاف ورزیوں کو روکا جا سکے۔

Image result for The Palestinian governor of Jerusalem is once again arrested by Israel
غیث کے دفتر کی جانب سے یہ بیان قابض اسرائیلی حکام کے ہاتھوں بیت المقدس میں کئی فلسطینی تعلیمی ، طبی اور میڈیا اداروں کی بندش کے بعد جاری ہوا تھا۔ اس دوران مذکورہ اداروں میں کام کرنے والوں کو تحقیقات کے واسطے گرفتار بھی کیا گیا۔ غیث کے بیان میں کہا گیا کہ فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل کی پالیسی کا مقصد یہ ہے کہ امن کو یقینی بنانے کے بقیہ ماندہ مواقع کو بھی سبوتاڑ کر دیا جائے۔

Image result for The Palestinian governor of Jerusalem is once again arrested by Israel
یاد رہے کہ گذشتہ ماہ بھی اسرائیلی فوج نے بیت المقدس کے گورنر عدنان غیث اور فتح موومنٹ کے سکریٹری جنرل شادی مطور کو گرفتار کر لیا تھا۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ مذکورہ دونوں شخصیات نے مقبوضہ مشرقی بیت المقدس میں “فلسطینی اتھارٹی کی خود مختاری” پر عمل کی کوشش کی تھی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *