منشیات کی اسمگلنگ کرتا ہوا فوج کا حولدار پولیس کی گرفت

Share Article

 

پولیس نے منشایت کی اسمگلنگ کرتے ہوئے ایک فوج کے سارجنٹ کو گرفتار کیا ہے۔ کرنال پولیس کی کرائم یونٹ جاسوسی عملے انچارج انسپکٹر وریندر رانا کے ذریعہ جمعرات کی رات ٹیم کو سب انسپکٹر رنبیر سنگھ کی صدارت میں تھانہ سول لائن کے علاقے میں گشت کرنے کے لئے روانہ کیا۔ٹیم کو کاچھوا اووربرج کے نیچے خالی جگہ پر ایک کار مشتبہ حالات میں نظر آئی اور اس گاڑی کے پاس کھڑا ایک شخص پولیس کی گاڑی کو دیکھتے ہی کار میں گھس گیا۔ اس کی اس حرکت رنبیر سنگھ کو اس پر شک ہوا اور انہوں نے گاڑی روکواکر اس کی گاڑی میں موجود افراد سے پوچھا کہ وہ کہاں سے آئے ہیں اور یہاں کس لئے کھڑے ہیں۔ تو بات سنتے ہی گاڑی کی پیچھے کی سیٹ پر بیٹھے شخص نے اپنی کھڑکی کھولی اور نکل کر بھاگنے کی کوشش کرنے لگا، لیکن وہاں پر موجود پولیس ٹیم نے اپنے مستعدی اسے اس کو گرفتار کر لیا۔

 

 

گاڑی کی تلاشی لینے پر پولیس ٹیم کو اس سے 1.503 کلو گرام افیون برآمد ہوئی، جو پولیس ٹیم کی طرف سے فوری طور پر دونوں افراد کو پولیس حراست میں لے لیا گیا۔ گاڑی سے بھاگنے کی کوشش کرنے والے ملزم کی شناخت ملزم اکھل دیو ساکن نوادہ ضلع گڈوا جھارکھنڈ کے طور پر ہوئی، جو فوج میں میڈیکل کور میرٹھ کینٹ میں حولدار کے عہدے پر تعینات ہے۔ پولیس پوچھ گچھ پر اس نے بتایا کہ اس مہینے چھٹی پر اپنے گھر گاؤں نوادہ جو جھارکھنڈ ریاست میں پڑتا ہے کیا گیا تھا اور وہاں سے 12 مئی کو میرٹھ آیا۔ جو میرٹھ آتے وقت اپنے گاؤں سے 2 کلو گرام افیون لایا تھا اور یہ گاڑی وہ میرٹھ کینٹ سے کرائے پر لے کر آیا ہے۔ ملزم نے بتایا کہ اس کے پاس نصف کلو گرام افیون میرٹھ کینٹ میں رکھی ہوئی ہے۔ پولیس پوچھ گچھ پر ملزم نے بتایا کہ یہ افیون وہ اپنے گاؤں سے اپنے بھائی روی سے لے کر آیا تھا۔ پولیس ٹیم کی طرف سے ملزم کے خلاف تھانہ سول لائن میں مقدمہ نمبر 415 22 مئی کو دفعہ این ڈی پی ایس ایکٹ کے تحت درج کیا گیا۔

 

 

جمعہ کو پولیس نے ملزم کو عدالت میں پیش کیا، جہاں سے اس کو6 دن کے پولیس ریمانڈ پر بھیج دیا۔ انسپکٹر وریندر رانا نے بتایا کہ تقریبا تین ماہ قبل ملزم کے بھائی روی کو بھی ضلع پولیس کرنال کے ذریعہ منشیات اسمگلنگ کرتے ہوئے قابو کیا گیا تھا اور ملزم اپنے بھائی کے معاملے کی پیروی کے لئے کرنال میں آتا تھا، جس دوران اس کے تار کرنال کے منشیات اسمگلروں سے جڑ گئے۔ جس کے سلسلے میں ریمانڈ کے دوران ملزم سے پوچھ گچھ کرکے پتہ لگایا جائے گا اور جلد سے جلد سلاخوں کے پیچھے پہنچایا جائے گا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *