گینگسٹرکوشل نے چوتھی بار کانگریسی لیڈر کو دھمکی دی

Share Article

 

کانگریس ریاستی ترجمان وکاس چودھری کے قتل کے بعدچرچہ میں آئے گینگسٹر کوشل نے اب فرید آباد کو اپنا جبراً کا اڈہ بنانا شروع کر دیا ہے۔ پولیس ابھی وکاس چودھری قتل کے اہم ملزمان کو گرفتار بھی نہیں کر پائی کہ گینگسٹر کوشل نے پھر سے بلبھ گڑھ کے کانگریسی لیڈر اور ربڑ تاجر منوج اگروال کو وصولی کے لئے دھمکیاں دینی شروع کر دی ہیں۔

کوشل نے اتوار کی رات چوتھی بار منوج اگروال کو وصولی کے لئے دھمکی دی اور ایک کروڑ روپے کی رقم نہ دینے پر وکاس چودھری کی طرح انجام بھگتنے کی دھمکی دی۔ تین دنوں کے دوران چار بار کی کوشل کی ان دھمکیوں سے اگروال خاندان خوف کے سائے میں ہے۔ تاہم پولیس نے انہیں دو گن مین سیکورٹی کے لحاظ سے دستیاب کروا دیے ہے۔ اس کے باوجود بار بار دھمکیاں ملنے سے منوج اگروال اور ان کے خاندان کافی خوفزدہ ہے۔ پولیس نے خواہ اگروال کی شکایت پر رنگداری مانگنے کا مقدمہ درج کر لیا ہو لیکن ابھی تک پولیس کوشل کے شوٹروں تک بھی نہیں پہنچ پائی ہے۔

ذرائع کے مطابق ہر بارکوشل کے ذریعہ وہاٹس اپ وائس کال کے ذریعے دھمکی دی جاتی ہے تاکہ وہ ریکارڈ نہ ہو سکے لیکن جس نمبر سے دھمکیاں دی جا رہی ہے، وہ بینکاک کے بتائے گئے ہیں اور کوش اس وقت دبئی سے اپنا جبراًوصولی کا کاروبار چلا رہا ہے۔ فرید آباد کے ساتھ ساتھ گروگرام میں بھی اس نے کئی بڑے لوگوں کو اس قسم کی دھمکی دے کر پیسے مانگے ہیں۔ وہیں پولیس کے ترجمان صوبے سنگھ کا کہنا ہے کہ کرائم برانچ کی کئی ٹیمیں وکاس قتل کے اہم شوٹرو ںکی گرفتاری کے لئے کوشاں ہیں۔منوج اگروال کو سیکورٹیفراہم کروا دی گئی ہے اور انہیں جن نمبروں سے دھمکیاں دی گئی ہیں، ان کی سائبر ٹیم کی طرف سے تحقیقات کی جا رہی ہے۔

غور طلب ہے کہ وکاس چودھری قتل کے بعد گزشتہ ایک ماہ کے دوران شہر میں سرعام ہوئی ہلاکتوں کی وارداتوں سے شہرکا عام آدمی اپنی حفاظت کو لے کر خاصا پریشان ہے۔ اب دیکھنا یہ ہے کہ شہر میں کوشل کیبڑھتی دہشت پر پولیس کس طرح قابو پاتی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *