پرینکا گاندھی کی ڈریس پر بی جے پی لیڈر کا متنازعہ بیان، کہی یہ شرمناک بات

Share Article

بستي: پرینکا گاندھی کے سیاست میں باضابطہ طور پر داخل ہونے کے بعد ہی سیاسی گلیاروں میں ہلچل بڑھ گئی ہے۔ بی جے پی لیڈر ایک کے بعد ایک متنازعہ بیان دے رہے ہیں۔ اسی ترتیب میں اب ایک نام اور جڑ گیا ہے۔ اترپردیش کے بستی سے بی جے پی ممبر اسمبلی ہریش دویدی نے مريادا کی ساری حدیں پار کرتے ہوئے پرینکا گاندھی کے پہناوے کو لے کر شرمناک بیان دیا ہے۔

Image result for priyanka gandhi in basti

رپورٹ کے مطابق بی جے پی ممبر پارلیمنٹ نے کہا کہ پرینکا گاندھی جب دہلی میں رہتی ہیں تو جینس اور ٹاپ پہنتی ہیں۔ جیسے ہی پرینکا علاقے میں عوام کے درمیان جاتی ہیں تو وہ ساڑی اور سندور لگا کر آتی ہیں۔ بی جے پی کے لیڈرکے اس بیان کے بعد سیاسی ہنگامہ کھڑا ہو گیا ہے۔

دراصل اترپردیش کے بستی ضلع میں منعقد اجتماعی پروگرام میں بطور مہمان خصوصی شرکت کرنے پہنچے ہریش دویدی جہاں ایک طرف 225 جوڑوں کی شادی کراتے اور انہیں انعامات دیتے نظر آئےوهيں دوسری طرف انہوں نے پرینکا گاندھی کے پہناوے کو لے کر متنازعہ بیان دے دیا۔ جس پر تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے۔ساتھ ہی راہل گاندھی کو گھیرتے ہوئے ہریش دویدی نے کہا کہ راہل فیل ہیں تو پرینکا بھی فیل ہیں۔تاہم بعد میں ہریش دویدی صفائی دیتے ہوئے بھی نظر آئے۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا میں جو کلپ چلائی جا رہی وہ درست نہیں ہے۔

 

Image result for priyanka gandhi in basti

غور طلب ہے کہ کانگریس کی طرف سے پرینکا گاندھی کو پارٹی کا جنرل سکریٹری مقرر کئے جانے کے بعد سے ہی بی جے پی کے لیڈران حملہ آور ہیں۔ جہاں ایک طرف کانگریس کے کارکن پرینکا گاندھی کو کبھی ماں درگا اور جھانسی کی رانی کے طور پر عکاسی کا کوئی موقع نہیں چھوڑ رہے ہیں وہیں دوسری طرف بی جے پی مسلسل پرینکا گاندھی کے ساتھ ساتھ کانگریس کو گھیرنے میں لگی ہوئی ہے۔لیکن بی جے پی لیڈروں کی زبان کی سطح مسلسل گرتا جا رہا ہے۔ گزشتہ دنوں جہاں بی جے پی ممبر اسمبلی سریندر سنگھ نے پرینکا اور راہل گاندھی کو راون اور شورپكھا قرار دی تھی۔ وہیں بی جے پی جنرل سکریٹری کیلاش وجيورگيينی نےپرینکا گاندھی کی کرینہ کپور اور سلمان خان سے موازنہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ کانگریس چاکلیٹي چہروں کے ذریعے الیکشن جیتنا چاہتی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *