ناخلف پوتے کے ہاتھوں دادا دادی کا وحشیانہ قتل

Share Article

 

جموںو کشمیر کے ضلع کٹھوا کے وارڈ نمبر ایک میں ایک دل دہلانے والا معاملہ سامنے آیا ہے ۔یہاں ایک نا خلف پوتے نے اپنے دادا دادی کا بڑی بے رحمی سے قتل کر دیا اور واقعہ کو انجام دینے کے بعد موقع سے فرار ہو گیا۔ واردات کی اطلاع پاکر ایس ایس پی کٹھوعہ سمیت دیگر پولیس افسر خود موقع پر پہنچے اور مقدمہ درج کر تحقیقات شروع کر دی۔ پولیس نے دونوں لاشوں کو اپنے قبضے میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے ڈسٹرکٹ اسپتال کٹھوا بھیج دیا ہے۔

 

اطلاعات کے مطابق جمعہ کی دیر رات 2 بجے کے قریب کٹھوا کے پولیس لائن روڈ پر واقع وارڈ نمبر 1 میں رہنے والے 85 سالہ بزرگ چاند ولد بھکتو رام اور ان کی بیوی سنجوکتا عمر 75 سال دونوں بزرگاپنے کمرے میں سوئے ہوئے تھے تبھی ان کا پوتا ساحل عرف مونو عمر 20 سال جو ہماچل میں رہتا تھا اور گزشتہ چار پانچ دن سے اپنے گھر کٹھوا میں آیا ہوا تھا۔

 

ساحل کی پھوپھی انجو دیوی نے بتایا کہ اس کا بھتیجا ساحل جو شہر سے باہر کام کرتا ہے اور گزشتہ چار پانچ دن سے اپنے گھر کٹھوا میں آیا ہوا تھا اور عجیب غریب حرکتیں کر رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ساحل کبھی اپنے باپ کو اور کبھی اپنی ماں کو مارتا تھا اور کبھی اس کی بہنوں پر بھی ہاتھ اٹھاتا رہتا تھا، قتل والی رات کو بھی ساحل اپنے والدین کو قتل کرنے کی کوشش کر رہا تھا، تبھی ساحل کے والد نے اسے ایک کمرے میں بند کر دیا جہاں پر دادا دادی رہتے تھے۔ وہیں پوتے ساحل نے اسی کمرے میں دیوی دیوتاؤں کی جگہ پر پڑے ہتھیار سے دادا اور دادی پر حملہ کر دیا جن کی موقع پر ہی موت ہو گئی۔ صبح سے ہی پولیس تفتیش کر رہی ہے اور قتل کی وجوہات کا ابھی انکشاف نہیں ہو پایا ہے اگرچہ گھر والوں کا کہنا ہے کہ لڑکا ذہنی طور پر پریشان تھا جو گزشتہ 4 دن سے اس قسم کی عجیب و غریب حرکتیں کر رہا تھا۔ایس ایس پی کٹھوعہ کے مطابق قاتل ساحل کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے اور اس سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ساحل کی میڈیکل جانچ کروائی جائے گی، تاکہ پتہ چل سکے کہ اس نے ذہنی توازن بگڑنے سے قتل کی ہے یا نشے میں مبتلا ہو کر اپنے دادا دادی کو مارا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *