عاشق جوڑے کی لاشیں پھانسی پر جھولتی ملیں، پولیس کی تحقیقات میں مصروف

Share Article

 

اتر پردیش کے فرخ آباد ضلع میں ہفتہ کو پریمی جوڑے کی لاشیں پھانسی کے پھندے پر جھولتی پائی گئیں۔ پولیس نے دونوں لاشوں کو اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔

شہر کوتوالی کے نگلا خیر بند کی رہنے والی پوجا یادو (18) دختر وریندر سنگھ یادو اور پڑوسی ضلع قنوج کے تھانہ سورکھ کی گرام حسین پوررہائشی دنیش چندر موریہ (28) ولد شائم وہاری موریہ کی لاشیں پوجا یادو کے مکان میں پھانسی کے پھندے پر جھولتی دیکھ کہرام مچ گیا۔

پوجا کے والد نے معاملے کی اطلاع کوتوالی پولیس کو دی۔ موقع پر پہنچی پولیس نے تفتیش شروع کر دی ہے۔ گرل فرینڈ پوجا یادو کا باپ وریندر یادو ریلوے میں کنڈکٹر کے عہدے پر تعینات تھا۔ وہ چار سال پہلے ریٹائر ہو چکا ہے۔ انہوں نے ریلوے کالونی کے قریب گرام نگلاخیر بند میں مکان بنایا ہے۔ ان کاکوارٹر خالی تھا۔یہ کوارٹر نو بھارت سبھا بھون کے پیچھے ہے۔

عاشق دنیش چندر ریلوے میں ٹریک مین عہدے پر تعینات تھا۔پوجا اور دنیش چند رکا گزشتہ کئی سالوں سے معاشقہ چل رہا تھا۔پوجا کے پاس اپنے باپ کے کوارٹر کی چابی رہتی تھی۔ دونوں اسی کوارٹر میں چوری چھپے ملتے تھے۔جمعہ کی رات دونوںاسی مکان میں ٹھہرے۔ ہفتہ کو صبح 4 بجے دونوں کی لاشیں پھانسی کے پھندے پر جھولتی پائی گئیں۔اس بات کی معلومات ملنے پر پوجا اور دنیش کے لواحقین رات میں ہی کوارٹر پہنچے۔انہوں نے واقعہ کی معلومات جی آر پی کو دی۔ جی آر پی نے کوتوالی فرخ آباد پولیس کو حادثے کی معلومات دی ۔ اطلاع پر ریلوے روڈ چوکی انچارج راجیو سنگھ یادو موقع پر پہنچے۔

چوکی انچارج راجیو سنگھ کا کہنا ہے کہ کوارٹر کی چھت کے کنڈے میں پوجااور دنیش کی لاشیں ایک ہی رسی سے لٹک رہی تھیں۔ نیچے گیس سلنڈر رکھا ہوا تھا۔ سمجھا جاتا ہے کہ عاشق جوڑے نے پھانسی لگانے کے لئے گیس سلنڈر استعمال کیا ہوگا۔عاشق ریلوے اہلکار تھا۔ اس کی شادی ہوچکی ہے۔پوجا غیر شادی شدہ تھی۔ اس کے والد ریلوے ملازم تھے۔ جو ریٹائرڈ ہو چکے ہیں۔

شہر کوتوال سنجے مشرا نے بتایا کہ معاملے کی جانچ کی جا رہی ہے۔ ابھی تک دونوں اطراف میں سے کسی نے تحریر نہیں دی ہے۔ تحریر ملنے پر رپورٹ درج کرائی جائے گی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *