ہمارے لئے سب سے بڑا اور مقدس گرنتھ ہے آئین ہے: مودی

Share Article

 

وزیر اعظم نریندر مودی نے یوم آئین کے موقع پر پارلیمنٹ ہاؤس کے مرکزی کمرے میں منعقد دونوں ایوانوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فرائض میں ہی شہریوں کے حقوق کی حفاظت ہے اور نئے بھارت کی تعمیر کے لئے شہریوں کو اپنی ہر سرگرمی میں ڈیوٹی پر زور دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا آئین ہمارے لئے سب سے بڑا اور مقدس گرنتھ ہے۔ ایک ایسا گرنتھ، جس میں ہمارے زندگی کے، ہمارے سماج کی، ہماری روایات اور عقائد کی شمولیت ہے اور نئے چیلنجوں کا حل بھی ہے۔وزیراعظم نریندر مودی نے آئین اپنانے کے 70 ویں سالگرہ پر پارلیمنٹ کے مرکزی ہال میں منعقد خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آئین ہمارا رہنما ہے۔اس کا مثبت استعمال کر کے اسے اور مزید مضبوط کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے ممبران پارلیمنٹ سے اپیل کی کہ وہ ایسی مثال پیش کریں جس سے ایک پیغام جائے اور لوگ اپنے فرائض پر عمل کریں۔

ہندوستانی آئین کے 70 سال پورے ہونے کے موقع پر مودی نے کہا کہ آئین کی اصل طاقت ملک کے شہری ہیں۔ انہوں نے ہندوستانی آئین کو عالمی جمہوریت میں بہترین قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ شہریوں کو نہ صرف ان کے حقوق کے تئیں بھی آگاہ رکھتا ہے۔
قبل ازیں لوک سبھا اسپیکر اوم برلا نے منگل کو ہندوستانی آئین کو ملک کی تہذیب و ثقافت اور آدرشوں کاعکاس بتاتے ہوئے ’یوم آئین‘ کو ’بنیاد ی فرائض کا تہوار‘ کے طور پر منانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس کے بتائے راستہ پر چل کر ہی نئے ہندوستان کی تعمیر کی جا سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئین نے بنیادی انسانی زندگی کے ہر پہلو کو منظم کیا ہے۔ اداروں کا احترام کیا جانا چاہیے اور ملک کی خودمختاری کو محفوظ رکھا جانا چاہیے۔ آئین سے جہاں آزادی کو طاقت ملی ہے وہیں یہ ہمیں نظم و ضبط بھی سکھاتا ہے۔برلا نے لوگوں سے سائنسی سوچ کو فروغ دینے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ آئین ہمیں آدرشوں اور فرائض کی بھی یاد دلاتا ہے۔ یہ ہمیں بنیادی فرائض اور آدرشوں کے اقدار کی بھی یاد دلاتا ہے۔صرف حقوق کی بات کرنے سے عدم توازن پیدا ہوتا ہے اور اس سے ملک کی ترقی کی رفتار سست ہوتی ہے۔انہوں نے آئین کو راہ نما بتاتے ہوئے کہا کہ اس کا تخلیقی استعمال کیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی 70 سال کی ترقی کے سفر کے دوران آئین نے بہترین کردار ادا کیا ہے۔ اس نے چیلنجوں کے ساتھ ساتھ مواقع بھی دیئے ہیں۔ نئی ٹیکنالوجی سے چیلنجوں کا مقابلہ کیا جا سکتا ہے۔برلا نے بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کے ساتھ ہی آئین سازوں کا شکر کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی امیدوں کے مطابق آئین بنایا گیاہے۔ اس سے ملک کی ثقافت اور تہذیب کا اظہار ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ70سال قبل یعنی 26 نومبر 1949 کو ملک نے آئین کو قبول کیا تھا جس کی خوشگوار یادیں آج بھی تازہ ہو جاتی ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *