مہاراشٹر کی ایک خاتون کو لے کر ڈاکٹر سے لے کر ہیلتھ آفیسرتک سب حیران ہیں۔ دراصل خواتین 20 ویں بار بچے کو جنم دینے والی ہے۔ 20 مرتبہ حاملہ ہونے کی بات ضرور آپ کو سننے میں عجیب لگ رہی ہوگی، لیکن یہ سچ ہے۔
38 साल की उम्र में 20वीं बार प्रेग्नेंट हुई महिला, डॉक्टर भी हैरान
ڈاکٹروں نے بتایا کہ بیڑ ضلع کی رہنے والی 38 سالہ لنكابائي كھراٹ خانہ بدوش گوپال کمیونٹی سے ہے۔ وہ حاملہ ہونے کے چلتے بیڑ ضلع کے سرکاری ہسپتال میں داخل ہوئی تھی۔
38 साल की उम्र में 20वीं बार प्रेग्नेंट हुई महिला, डॉक्टर भी हैरान
جب اس سے حمل کے بارے میں پوچھا گیا تو اس نے بتایا کہ وہ 20 ویں بار ماں بننے والی ہے تو ڈاکٹر حیران رہ گئے۔ اس بارے میں بیڑ ضلع کے سول سرجن ڈاکٹر اشوک تھوراٹ نے بتایا کہ عورت کے 11 بچے ہیں اور 38 سال کی عمر میں وہ 20 ویں بار ماں بننے والی ہے۔
38 साल की उम्र में 20वीं बार प्रेग्नेंट हुई महिला, डॉक्टर भी हैरान
اس سے پہلے اب تک وہ 19 بار حاملہ ہو چکی ہے اور اب وہ پھر سات ماہ کی حاملہ ہے۔ عورت کی تمام ضروری تفتیش مکمل کر دی گئی ہے۔ وہ 20 ویں بار حاملہ ہوئی ہے۔ زچہ اور بچہ اب تک صحت مند ہیں۔ اس انفیکشن سے بچنے کے لئے حفظان صحت اور دیگر چیزوں کا مشورہ دیا گیا ہے۔
38 साल की उम्र में 20वीं बार प्रेग्नेंट हुई महिला, डॉक्टर भी हैरान
ڈاکٹر اشوک تھوراٹ نے مزید کہا کہ یہ پہلی بار ہوگا جب خواتین کے ہسپتال میں بچے کو جنم دے گی۔ اس سے پہلے اس نے گھر پر ہی بچے کو جنم دیا تھا۔
38 साल की उम्र में 20वीं बार प्रेग्नेंट हुई महिला, डॉक्टर भी हैरान
وہیں، بیڑ ضلع كلیكٹریٹ سے ایک افسر نے بتایا کہ حاملہ عورت لنکابائي كھراٹ بیڑ ضلع کے مجل گاؤں تحصیل میں كےساپري علاقے کی رہنے والی ہے۔ وہ گوپال کمیونٹی سے ہے جو عام طور پر بھیک مانگنے یا اجرت کا کام کرتے ہیں۔ خانہ بدوش کی وجہ وہ ایک جگہ سے دوسری جگہ پر جاتے رہتے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here