بی جے پی کے ساتھ اتحاد کو لے کر ادھو ٹھاکرے نے دی صفائی، یہ ہیں 5 اہم باتیں

Share Article
BJP president Amit Shah meets Shiv Sena chief Uddhav

 

شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے بی جے پی کے ساتھ اتحاد پر ‘سامنا میں صفائی دی ہے۔

 

Image result for udhav thakre editorial in paper samna

شیوسینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے پارٹی کے بی جے پی کے ساتھ ہاتھ ملانے کو لے کر صفائی دی ہے۔ پارٹی کے جس اہم اخبار ‘سامنا کے اداریہ میں ادھو ٹھاکرے حال فی الحال بی جے پی اور مودی حکومت پر تیز حملے کرتے آئے ہیں، اسی کے ذریعے ادھو ٹھاکرے نے بی جے پی کے ساتھ نئے سرے سے اتحاد کو لے کر اپنی بات رکھی۔

 

 

بتا دیں کہ منگل کو ممبئی میں بی جے پی-شیوسینا اتحاد کے اعلان کے بعد سے ہی شیوسینا کے سربراہ سوشل میڈیا پر troll کے کئے جا رہے تھے۔ سامنا میں لکھے گئے لانگ وسیع ادارتی کے 5 اہم باتیں اس طرح ہیں۔

 

 

– بی جے پی صدر امت شاہ خود ماتوشري آئے تھے اور ان کے سامنے شیوسینا نے ‘ٹھاکرے پرزور طریقے سے اپنا موقف رکھا۔

– بی جے پی کے ساتھ اتحاد نہ تو فرار اور نہ ہی لاچاری۔ ملک میں ہوا کس سمت میں بہہ رہی ہے یہ کل ہی پتہ چلے گا لیکن ‘ہوا ہماری طرف گھوم گئی ہے۔ ہوا آئے گی اس لئے ہم نے پیٹھ نہیں دکھائی۔ تاریخ کو اسے درج کرنا ضروری۔ فی الحال اتنا ہی۔ تلوار کی

دھار برقرار اور شیوسینا کی تلوار ‘ميانبد نہیں ہے۔

– 2014 میں بی جے پی سے قانونی طورپر پھر ایک طرح ہوئے؟ رام مندر بنے گا کیا؟ شیوسینا کا وزیر اعلی بنے گا کیا؟ ایسے کئی سوال ہیں اور ان جوابات مثبت ہیں۔

– نتیش کمار جیسے ساتھی نے بھی دو بار ‘این ڈی اے چھوڑا ہے۔ سیاست میں پھر ساتھ آنے کے لئے کچھ عام لفظ کہے جاتے ہیں جیسا کہ ‘قومی وسیع مفاد، ‘مفاد عامہ اور ‘عوام کی خواہش۔اس خواہش کے مطابق کانگریس کا مهاگٹھبدھن ہو اور نتیش کمار وغیرہ

NDA میں آ سکتے ہیں تو شیوسینا تو اس NDA کی برابری کی حصہ دار ہی ہے۔
– 2019 کی پوزیشن ایسی ہے کہ یہ انتخابات لہر پر نہیں بلکہ غورہے، کام اور مستقبل پر لڑنا ہے۔ راہل گاندھی کی ترقی کتاب 2014 کے مقابلے میں ضرور ایسی اصلاح شدہ ہے۔ مدد کے لئے پرینکا گاندھی ہیں لیکن ان کا موازنہ مودی کی قیادت سے نہیں کی جا سکتی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *