ساتویں کلاس کی طالبہ کی آبروریزی ،اسپتال میں داخل

Share Article
rape
راجستھان کے ڈونگرپورضلع کے صدرتھانہ علاقہ کے گاؤں میں بدھ کوشام میں ماں کے ساتھ جنگل میں لکڑیاں چن کرلوٹ رہی 10سال کی معصوم بچی کا اغواکرکے ریپ کرنے کا معاملہ سامنے آیاہے۔ ملزم نوجوان نے بچی کواغواکے قریب ڈیڑھ گھٹنے بعد گاؤں کے چوراہے پرچھوڑکرفرارہوگیا۔لہولہان بچی کوضلع اسپتال میں داخل کرایاگیاہے۔پولس نے پاکسوایکٹ کے تحت معاملہ درج کرکے چھان بین شروع کردی ہے۔
پولس کی رپورٹ میں متاثرہ کی ماں نے بتایاکہ اس کی بچی ساتویں کلاس میں پڑھتی ہے۔جنگل سے لکڑیاں بِنّے کے بعد شام شاڑھے پانچ بجے شوہرکہنے پرماں -بیٹی گھرجانے کیلئے روانہ ہوئے۔اس کے پیچھے پیچھے شوہرآرہے تھے۔ کچھ دور جانے پر دھاوڑی رہائشی کملیش پاٹیدار موٹرسائیکل لیکر آیا۔متاثرہ کی ماں نے بتایا کہ ملزم نوجوان نے بچی کو گھر چھوڑنے کی بات کہہ کر بائیک پر بیٹھایا تھا۔ انہو ں نے بتایاکہ منع کرنے پربھی اس نے زبردستی موٹرسائیکل پربٹھاکرلے گیا۔ماں کے چلانے پربھی نہیں مانا۔جب وہ گھر پہنچی تو بیٹی گھرپر نہیں ملی ، جس کے بعد وہ اس کی تلاش میں نکل گئی۔ انہوں نے بتایا کہ گھر سے کچھ ہی دوری پر بیٹی کو آتے ہوئے دیکھا۔ اس دوران پتہ چلاکہ کوئی موٹرسائیکل سواربچی کوگاؤں کے چوراہے پرچھوڑگیاہے۔متاثرہ نے ماں کو دیکھ کر ساری حقیقت بتائی۔ بیٹی کو خون سے لت پت دیکھ کر ماں نے اہل خانہ کو اس کی اطلاع دی۔اس دوران مقامی لوگ جمع ہوگئے۔بچی کوضلع اسپتال میں داخل کرایاگیا۔طالبہ کو سنگین حالت میں میڈیکل کالج میں داخل کرایا گیا ہے۔ متاثرہ کا میڈیکل کروا کر پولیس ملزم نوجوان کی تلاش میں مصروف ہوگئی ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *