سری لنکا میں سوشل میڈیا پر عارضی طور پر پابندی عائد

 

سنہالی کمیونٹی کے لوگوں اور اقلیتی مسلمانوں کے درمیان ہوئی پرتشدد جھڑپوں کے بعد احتیاط کے طور پر سری لنکا انتظامیہ نے پیر کے روزسے عارضی طور پر سوشل میڈیا، فیس بک کی طرح، وہاٹس ایپ اور وائبر پر پابندی لگا دی ہے۔

 

حالانکہ ان دو فرقوں کے درمیان ہوئی کشیدگی کے بعد نیگومبو میں لگایا گیا کرفیو ہٹا لیا گیا ہے، لیکن حکومت احتیاط برت رہی ہے ۔ واضح ہو کہ 21 اپریل کے بعد ان دونوں فرقوں کے درمیان ہوئے تشددکا یہ پہلا واقعہ تھا۔

قابل ذکر ہے کہ 21 اپریل کو ایک کے بعد ایک ہوئے دھماکوں کے بعد دونوں فرقوں کے درمیان پرتشدد جھڑپیں ہوئی تھیں۔ اس کے بعد سوشل میڈیا پر پابندی لگا دی گئی تھی اور 30اپریل کواس پر عائد پابندی کو ہٹا لیا گیا تھا۔ اب پھر سے پابندی لگائی گئی ہے ۔

پولیس کے ترجمان ایس پی رون گناسیکرا نے بتایا کہ صورت حال پر کنٹرول ہو جانے کے بعد پیر کی صبح سات بجے نیگومبو سے کرفیو ہٹا لیا گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *