بی ایس پی کے سابق وزیر حاجی یعقوب اور بیٹے عمران پر لٹکی گرفتاری کی تلوار

Share Article

 

۔ کروڑوں روپے کی زمین گھوٹالے میں گرفتاری کے لئے دیوالی سے پہلے دی گئی تھی دبش

کروڑوں روپے کی زمین کا فرضی بیع نامہ کرکے پھنسے بی ایس پی کے سابق وزیر حاجی یعقوب قریشی اور ان کے بیٹے عمران پر گرفتاری کی تلوار لٹک رہی ہے۔ دیوالی سے پہلے باپ۔ بیٹے کی گرفتاری کے لئے دبش دی گئی تھی لیکن وہ مل نہیں پائے تھے۔ دیوالی تہوار کے درمیان مناسب تعداد میں پولیس فورس نہ ہونے سے پولیس انتظامیہ کوئی رسک نہیں لینا چاہتا لیکن تہوار نمٹتے ہی کبھی بھی ان کی گرفتاری ہو سکتی ہے۔ایس ایس پی اجے کمار ساہنی کا بھی کہنا ہے کہ تہوار کے بعد ان کی گرفتاری کی جائے گی۔

حاجی پور گاؤں رہائشی مزمل نے بی ایس پی کے سابق وزیر یعقوب قریشی اور ان کے بیٹے عمران کے خلاف دھوکہ دہی اور جان لیوا حملے کا مقدمہ درج کرایا تھا۔ مزمل نے بتایا کہ ہاپوڑ روڈ پر واقع ڈھکولی گاؤں میں ان کی 4050 میٹر زمین تھی۔ 2002 میں ان کی ماں میرا کی موت کے بعد یہ زمین مزمل اور اس کے بھائی یامین، مستقیم، اور نواب کے نام کر دی گئی۔ مزمل نے الزام لگایا کہ سابق وزیر یعقوب قریشی اور اس کے بیٹے عمران نے بڑی چالاکی سے جعل سازی کرکے زمین کا فرضی بیع نامہ کرواکر زمین کو اپنے نام کروا لیا اور اسے جان سے مارنے کی دھمکی دینے لگے۔ الزام ہے کہ مالکانہ حق حاصل کرنے کے لئے مزمل اپنی زمین پر پہنچا تو یعقوب قریشی اور ان کے بیٹے عمران نے اس پر گولیاں برسا دیں جس میں وہ بال بال بچ گیا۔ مزمل کی شکایت پر پولیس افسران نے تفتیش کی اور کھرکھودا تھانے میں سابق بی ایس پی لیڈر یعقوب اور ان کے بیٹے عمران کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *