مودی نے شتروکوللکارا

Share Article
modi-shatu
اب تک شتروگھن سنہا پربچتے بچاتے بولنے والے سشیل مودی نے اب ان کے خلاف کھل کربولنا شروع کردیاہے۔مودی نے کہاکہ شتروگھن سنہاان کے آئکن رہے ہیں۔لیکن ان دنوں وہ جس طرح گالیاں دے رہے ہیں،انہیں بی جے پی سے استعفیٰ دے دینا چاہئے۔جس پارٹی نے انہیں کابینی وزیربنایا، دوبارراجیہ سبھا اوردوبارلوک سبھا بھیجا کیا اس کے بارے میں ایسی زبان کا استعمال کرنا چاہئے؟ دراصل وہ ان دنوں یشونت سنہاکی سنگت میں چلے گئے ہیں۔لالویادو سے ملنے چلے گئے۔آج ان کے بیٹے کوبہارکاوزیراعلیٰ بنارہے ہیں۔
مودی نے چیلنج کرتے ہوئے کہاکہ شتروگھن سنہاکواپنی مقبولیت پراتناہی گمان ہے توپٹنہ صاحب سے لوک سبھا سیٹ الیکشن لڑکردیکھ لیں۔ ان کے الیکشن جیتنے میں نندکشور یادو، رکن اسمبلی ارون کمارسنہا، نتن نوین اورسنجیوچورسیاکاکیاکم رول رہاہے۔چاراسمبلیوں میں 90سے بی جے پی کے الیکشن جیتنے کا ریکارڈ رہاہے۔پٹنہ صاحب سے کون الیکشن لڑے گا اس پر نائب وزیراعلیٰ نے کہاکہ یہ پارٹی طے کرے گی۔انہوں نے کہاکہ پارٹی کہے گی کہ الیکشن لڑنا ہے تولڑیں گے ، نہیں کہے گی تونہیں لڑیں گے۔
ادھرشتروگھن سنہانے کہاکہ مودی کابینہ میں وزیراسلئے نہیں بنا،کیونکہ میں لال کرشنن اڈوانی کے کیمپ کاتھا۔اگلے سیاسی پڑاؤ کے بارے میں کہاکہ ہم ابھی سے کیابتائیں، کیاہمارے دل میں ہے۔انہوں نے کہاکہ سیاست میں کچھ لینے کیلئے نہیں آیاہوں ۔اسلئے سچائی کے ساتھ سب کہتاہوں۔میں ملک کے تئیں بات کرتاہوں۔بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے کہاکہ ٹی وی ایکٹریس کووزیربنادیاگیا۔مجھے کیوں کہاجاتاہے کہ آپ فلموں سے ہیں۔آپ کوتجربہ نہیں ہے۔انہوں نے کہاکہ اٹل جی کے وقت لوک شاہی تھی ،آج تاناشاہی ہے۔پی ایم مودی نے کبھی چائے نہیں بیچی ،یہ محض اسٹنٹ ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *