اختیارات معاملہ:سپریم کورٹ سے دہلی سرکاربڑاجھٹکا

Share Article
LG-kejriwal
سپریم کورٹ نے دہلی سرکاربنام لیفٹیننٹ گورنر(ایل جی) معاملے میں جمعرات کوبڑافیصلہ سنایاہے۔سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت اور دہلی حکومت کے درمیان اختیارات سے منسلک عرضیوں پر اپنا فیصلہ سنایا۔دارالحکومت سروسز، حکام کے تبادلے اور پوسٹنگ کرنے اور اے سی بی کے قیام کا حق دہلی حکومت کے پاس رہے گا یا مرکزی حکومت کے پاس، اس پر جمعرات کو سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا یاہے۔
جسٹس اے کے سیکری اورجسٹس اشوک بھوشن کی بینچ نے دہلی سرکارکوجھٹکادیتے ہوئے کہاکہ اے سی بی، انکوائری کمیشن وغیرہ پرمرکزکوحق ہے۔وہیں بجلی اورزمین کے سرکٹ ریٹ پرریاستی حکومت کاحق بتایاہے۔ جسٹس ا ے کے سیکری اور جسٹس اشوک بھوشن کی بینچ نے انتظامی افسران کی تقرری اور تبادلہ کو لے کر الگ الگ رائے ظاہر کی۔جسٹس اے کے سیکری اور اشوک بھوشن والی دو ججوں کی بنچ نے سروسز معاملے کو تین ججوں کی بنچ کے پاس بھیج دیا ہے۔
دہلی پولیس کا کنٹرول دہلی حکومت کے پاس نہیں ہے مرکز کے پاس ہو گا۔ اس کے ساتھ ہی کیجریوال حکومت کو بڑا جھٹکا دیتے ہوئے جسٹس سیکری نے کہا کہ انسداد بدعنوانی بیورو ( اے سی بی) کا کنٹرول لیفٹیننٹ گورنر کے پاس رہے گا۔ اس سے پہلے تمام فریقوں کو سننے کے بعد بنچ نے تین ماہ پہلے یعنی ایک نومبر کو اپنا فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *