سپریم کورٹ نے انسیفلائٹس سے بچوں کی موت کے معاملے پر سماعت بند کی

Share Article

 

نئی دہلی، بہار میں انسیفلائٹس سے ہو رہی بچوں کی موت کے معاملے پر سپریم کورٹ نے سماعت بند کر دی ہے۔ کورٹ نے ریاست میں ڈاکٹروں کے خالی پڑے عہدوں کو بھرنے کی مانگ پر سماعت سے انکار کر دیا۔ کورٹ نے کہا کہ کورٹ ڈاکٹروں کی بھرتی نہیں کر سکتا، باقی راحت کے لئے درخواست گزار چاہیں تو پٹنہ ہائی کورٹ جا سکتے ہیں۔

اس معاملہ میں مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ میں حلف نامہ دائر کر کہا تھا کہ صحت ریاست کا موضوع ہے لیکن مرکز نے ریاستی حکومت کو مکمل تعاون دیا تھا۔ مرکز نے اپنے حلف نامے میں کہا تھا کہ نیشنل ہیلتھ مشن کے فنڈ سے ریاستی حکومت ایس کے ایم سی ایچ مظفر پور میں بچو ںکے لئے سو بیڈ والاآئی سی یو شروع کرے گی۔

مرکز نے اپنے حلف نامے میں کہا تھا کہ نیشنل ہیلتھ مشن کے فنڈ سے قریبی اضلاع میں 10 بیڈ والے آئی سی یوو اور پانچ وائرولوجی لیب قائم کی جائیں گی۔ حلف نامے میں کہا گیا تھا کہ انسیفلائٹس پھیلنے کی وجوہات کا پتہ لگانے کے لئے ہائی کوالٹی ریسرچ ٹیم قائم کیا جائیگی۔ بیماری پھیلنے کے ممکنہ وقت سے 3-4 ماہ پہلے ہی ڈاکٹروں کی ٹیمیں پبلک ہیلتھ سینٹرز پر موجود رہیں گی۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *