شتابدھی اور راجدھانی ٹرینیں چلانے کا ذمہ نجی شعبے کو دینے کی تیاری میں ریلوے!

Share Article

 

ریل کی وزارت کی توجہ ہے کہ نجی شعبے کی شرکت بڑھانے کے لئے پریمیم ٹرینوں کو چلانے کا اجازت نامہ جلد از جلد نجی ہاتھوں میں سونپا جائے۔

 

ریلوے کی صورت کو بہتر بنانے میں لگا ریل کی وزارت بڑا فیصلہ لینے کی تیاری میں ہے. وزارت مسافر گاڑیوں کی خدمات اب نجی شعبے کے حوالے کر سکتا ہے. آنے والے وقت میں راجدھانی اور شتابدھی جیسی پریمیم ٹرینوں کو چلانے کا ذمہ نجی کمپنیوں کو مل سکتا ہے.اس کو لے کر اگلے سو دنوں کا ایک ہدف بھی درست کیا گیا ہے، جس میں پریمیم ٹرینوں کو چلانے کا اجازت نامہ نجی کمپنیوں کو دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

 

ریلوے کے ذرائع کے مطابق، راجدھانی اور شتابدھی جیسی پریمیم ٹرینیں منافع میں چل رہی ہیں لہٰذا ایسی ٹرینوں کے آپریشن کا کام پرائیویٹ کمپنیوں لینے میں زیادہ دلچسپی ہوں گی.ریل کی وزارت کی توجہ ہے کہ نجی شعبے کی شرکت بڑھانے کے لئے پریمیم ٹرینوں کو چلانے کا اجازت نامہ جلد از جلد نجی ہاتھوں میں سونپا جائے.

 

ٹرینوں کو نجی ہاتھوں میں سونپنے کے پیچھے دلیل یہ ہے کہ اس سے پریمیم ٹرینوں کی مسافر سہولیات میں اضافہ ہوگا.اس طرح ریلوے کے کمرشیل آپریشن میں نجی شعبے بہتر سہولیات فراہم کرے گا، جب ریلوے ان ٹرینوں کا پرمٹ ٹینڈر کی بنیاد پر کسی آپریٹر کو دے گا تو ریلوے کے ڈبے اور انجن کی ذمہ داری ریلوے کی رہے گی.

 

اس کے علاوہ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ ریلوے سفر کرایہ کے اوپری کی حد مقرر کر دے گا یعنی پرمٹ پانے والی نجی کمپنی طے کرائے سے زیادہ نہیں وصول پائیں گی.

 

پریمیم ٹرینوں کو نجی ہاتھوں میں سونپنے کے لئے ریل کی وزارت کو ابھی پوری منصوبہ بندی کرنا ہے. ایسا مانا جا رہا ہے کہ بھارتی ریلوے میں پریمیم ٹرینوں کی ذاتی شرکت کو مرحلہ وار طریقے سے بڑھایا جائے گا. آغاز میں راجدھانی اور اس کے بعد شتابدھی ٹرینوں کو ایک ایک کر کے ٹینڈر کے ذریعے نجی کمپنیوں کو تفویض کیا جائے گا، لیکن اس کا خاکہ کیا ہوگی یہ اب طے کیا جانا باقی ہے۔

 

صرف مسافر گاڑیوں ہی نہیں بلکہ مال گاڑیوں میں بھی پرائیویٹ پارٹنرشپ بڑھانے کے لئے بڑے قدم اٹھائے جا سکتے ہیں. ریلوے کے ذرائع کے مطابق مالگاڑيوں اور ان ویگن میں نجی شعبے کی شرکت کو بڑھایا جائے گا. اس سے ریلوے کا مقصد ڈبل اسٹیک کنٹینرز کے لئے نئے ریلوے روٹ کھولنے، اس کے علاوہ مال گاڑیوں کی رفتار کو بڑھائے جانے پر ہے.

 

اس کے لئے ریئل ٹائم معلومات کے نظام یعنی آرٹی آئی ایس کو تمام لوکوموٹیو میں اس سال کے آخر تک لگا دیا جائے گا، ساتھ ہی ڈسپلے نیٹ ورک کو پورے ملک میں پھیلائے جانے کا منصوبہ بھی ریلوے نے بنائی ہے. اس سال کے آخر تک تمام ٹرینوں میں اور ریلوے اسٹیشنوں پر وائی فائی کی سہولت دینے کا ٹارگیٹ بھی درست کیا گیا ہے.

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *