سری لنکا بم دھماکہ:ڈیفنس سیکریٹری کے بعد اب پولیس کے سربراہ نے دیا استعفیٰ

srilanka-blast

دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ کے سری لنکا میں ایسٹر کے دن ہوئے خوفناک خودکش حملوں میں 253 لوگوں کی جانیں چلی گئی۔ اس مہلک بم حملوں کو روکنے میں سیکورٹی ادارے کی ناکامی سامنے آئی۔اس کے بعد صدر میترپالا سرسینا نے سری لنکا کے پولیس چیف کو چھوڑنے کے لئے کہا جس دو دن بعد جمعہ کو انہوں نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا۔
وزارت دفاع کا کام کاج بھی سنبھال رہے سرسینا نے کہا کہ اتوار کو تین ہوٹلوں اور تین گرجا گھروں میں ہوئے حملے کی ناکامی کو لے کر آئی جی پوجت جے سندرا نے استعفی دے دیا ہے. صدر نے بتایا، ”آئی جی پی نے استعفی دے دیا. انہوں نے نگراں سیکرٹری دفاع کو اپنا استعفی سونپ دیا۔میں جلد ہی ایک نیا آئی جی پی مقرر کروں گا۔”
ملک کے دفاع کے سیکریٹری فرنانڈو کے صدر کو اپنا استعفی سونپنے کے ایک دن بعد پولیس کے سربراہ کا استعفی سامنے آیا ہے۔سرسینا نے سابق میں خفیہ اطلاع ملنے کے باوجود دھماکوں کو روکنے میں ناکام رہنے کی وجہ سے فرنانڈو اور جے سندا کو چھوڑنے کے لئے کہا تھا۔سرسینا نے کہا کہ حکام نے ایک دوست ملک کی جانب سے ملی انٹیلی جنس ان کے ساتھ اشتراک نہیں کی۔انہوں نے کہا، ” ان سب نے آپس میں ہی کاغذات کا تبادلہ کیا۔
سرسینا نے بتایا، ” میں نے پولیس کے سربراہ اور سیکرٹری دفاع دونوں کو میرے ساتھ معلومات کا اشتراک نہیں کرنے کے بارے میں پوچھا تو وہ چپ رہے. ” انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے انٹیلی جنس مہمات میں کمزور ہونے کی وجہ سے بھی سیکورٹی چوک ہوئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *