سون بھدر ابھا گاؤں پہنچی پرینکا گاندھی، قتل عام کے شکار خاندانوں سے کی ملاقات

Share Article
Priyanka Gandhi Keeps Her ‘Promise’, Reaches Umbha to Meet Familes …

 

کانگریس کی قومی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا منگل کے روز سون بھدر کے ابھا گاؤں میں جاکر زمین تنازعہ میں ہوئے قتل عام کے شکار خاندانوں سے ملیں۔ گاؤں کے پرائمری اسکول کے احاطے میں تقریباً ڈیڑھ گھنٹے کے قیام کے دوران پرینکا زمین پر بیٹھ کر مرنے والوں کے اہل خانہ اور زخمیوں سے بات چیت کرتی رہیں۔ انہوں نے متاثرہ خاندان کی خواتین پورے واقعے کے بارے میں معلومات لی۔ ساتھ ہی ان کو ملنے والی اور مل چکی سرکاری امداد کے بارے میں پوچھتی رہیں۔ بیچ بیچ میں پرینکا چھوٹے چھوٹے بچوں کو اپنی گود میں بٹھاتی رہیں۔ خواتین کے سر پر پیار سے ہاتھ پھیرکر گلے بھی ملتی رہیں۔

اس دوران وہاں سیکورٹی کے وسیع انتظام دکھائی دیئے۔ ایس پی جی ٹیم نے ایک دن پہلے ہی پورے اسکول احاطے کو اپنے گھیرے میں لے لیا تھا۔ گھوراول کے ایس ڈی ایم ڈاکٹر کرپاشنکر پانڈے، سون بھدر کے ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ، گھوراول سی او جی سنگھ بھی وہاں فورس کے ساتھ تعینات رہے۔ وہیں محکمہ صحت، محکمہ تعمیرات عامہ، بجلی محکمہ کے افسر بھی مستعدی سے ڈیوٹی پر تعینات رہے۔

غور طلب ہے کہ 17 جولائی کو زمین پر قبضہ کرنے کو لے کر ابھا گاؤں میں قتل عام ہوا تھا۔ اس میں دس افراد کی جان چلی گئی تھی اور 28 افراد زخمی ہو گئے تھے۔ واقعہ کے دو دن بعد ہی 19 جولائی کو پرینکا واڈرا متاثرہ خاندانوں سے ملنے کے لئے آ رہی تھیں۔ راستے میں ہی انہیں نارائن پور، مرزاپور میں روک دیا گیا۔ اس دوران وہ وہیں دھرنے پر بیٹھ گئیں۔ اس کے بعد انہیں نارائن پور سے چنار واقع مہمان خانے لے جایا گیا، جہاں انہوں نے 24 گھنٹے سے زیادہ وقت تک دھرنا دیا تھا۔ پرینکا کے دبائو میں آئے وہاں کے ضلع انتظامیہ نے ابھا گاؤں کی متاثرہ خواتین اور دوسرے لوگوں سے انکو ملوایا۔ اس کے بعد پرینکا واپس دہلی لوٹ گئی تھیں۔ جاتے وقت انہوں نے متاثرہ خاندان کی خواتین سے کہا تھا کہ وہ پھر ان سے ملنے ابھا گاؤں آئیں گی۔ پرینکا نے 10-10 لاکھ روپے کی مالی مدد بھی اپنی پارٹی کی جانب سے قتل عام میں مارے گئے لوگوں کے خاندانوں کو دلائی تھی۔ پارٹی کے لیڈر متاثرہ خاندانوں تک چیک پہنچا چکے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *