سون بھدر کے واقعہ قانون و انتظام میں ناکامی کا پکا ثبوت: مایاوتی

Share Article

 

لکھنؤ، بہوجن سماج وادی پارٹی (بی ایس پی) کی سربراہ مایاوتی نے سون بھدر میں ہوئے 10 لوگوں کے قتل معاملے میں اتر پردیش کی بی جے پی حکومت پر قانون وانتظام کے معاملہ میں ناکام ہونے کا الزام لگایا ہے۔ بی ایس پی سربراہ نے ہفتہ کو ٹویٹ میں لکھا کہ قبائلیبرادری پر ظلم اور ان کا استحصال، ان کی زمین سے بے دخلی اور اب قتل عام ریاست کی بی جے پی حکومت کے قانون وانتظام کے معاملے میں فیل ہونے کا پکا ثبوت ہے۔

 

Image result for sonbhadra case

مایاوتی نے کہا کہ اتر پردیش ہی نہیں ملک کے عوام بھی ان سب سے بہت فکر مند ہیں جبکہ بی ایس پی حکومت میں درج فہرست ذات کے مفادات کا بھی خاص خیال رکھا گیا۔

 

Image result for sonbhadra case

دوسرے ٹویٹ میں انہوں نے لکھا کہ جان و مال کی حفاظت اور عوامی مفاد کے معاملے میں اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے حکومت دفعہ -144 کا سہارا لے کر کسی کو سون بھدر جانے نہیں دے رہی ہے، پھر بھی مناسب وقت پر وہاں جاکر متاثرین کی ہر ممکن مدد کرنے کیلئے بی ایس پی لیڈروں کو ہدایت دی ہے۔ سرکاری لاپروائی اس قتل عام کی بنیادی وجہ ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *