شرپسند عناصر کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی فضا خراب کرنے کی کوشش

Share Article

wall

 

یوپی میں بجرول گاؤں اتوارکی دیرشب مدرسے کی دیوارپرشرپسندعناصر نے کالکھ پوت کرگاؤں میں ماحول خراب کرنے کی کوشش کی۔سموارصبح اس معاملے جانکاری ہونے پرمسلم کمیونٹی کے لوگوں نے ہنگامہ کرکے ملزمو ں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیاؤ
باغپت : اترپردیش کے باغپت میں پیر کو کچھ شرپسند عناصر نے ایک مرتبہ پھر فرقہ وارانہ ہم ا?ہنگی کی فضا کو مسموم کرنے کی کوشش کی۔ شرپسند عناصر نے ایک مدرسہ کی دیوار پر کالکھ پوت دی ، جس کی وجہ سے مسلمانوں میں غم و غصہ پایا جارہا ہے۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور انہوں نے نامعلوم شرپسند عناصر کے خلاف کیس درج کرلیا ہے۔

 

 

پولس نے نامعلوم ملزموں کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی ۔واقعہ کولیکرگاؤں کاماحول کشیدہ ہے۔بڑوت -بوڈھانہ راستے پربجرول گاؤں جامعہ تعلیم القرآن کے نام مدرسہ ہے ۔مدرسہ کے منیجرشکیل سیفی نے بتایاکہ اتوارکی رات شرپسندعناصر نے مدرسہ کی مین گیٹ اوردیوارپرکالکھ پوت دی۔سموارصبح لوگوں کواس بات کی جانکاری ہوئی توکافی تعدادمیں لوگ جمع ہوگئے ۔مسلم سماج کے لوگوں نے شرپسندوں کے خلاف مظاہرہ کیا۔اطلاع ملنے پرپہنچی پولس نے معاملے جانکاری لی۔شکیل سیفی نے بتایاکہ 15دن کے اندرتیسری بارمدرسہ کی دیوارپرکالکھ پوتی گئی ہے۔انہو ں نے ملزموں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا اورانہو ں نے نامعلوم کے خلاف تحریردی۔ سی اورام چندکشواہانے بتایاکہ ملزموں کی تلاش کی جارہی ہے۔جلدہی انہیں پکڑلیاجائے گا۔
مدرسہ کے ایک مولانا نے بتایا کہ پہلے بھی کئی مرتبہ مدرسہ کی دیواروں پر کالکھ پوتی جاچکی ہے۔ پہلے بھی شرپسند عناصر نے مدرسہ میں غیر مناسب لفظ لکھ کر ماحول کو خراب کرنے کی کوشش کی تھی۔ گزشتہ رات نامعلوم لوگوں نے ایک مرتبہ پھر مدرسہ پر کالکھ پوت کر یہاں کی پرامن فضا کو مسموم کرنے کی کوشش کی۔ فی الحال پولیس معاملہ کی جانچ میں مصروف ہوگئی ہے۔بہرکیف سی او بڑوت رامانند کشواہا نے واقعہ کا جلد پتہ لگانے کی یقین دہانی کراکرمقامی لوگوں کے غصہ کو ٹھنڈا کیا۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *