ممبئی میں ریلی کے دوران اویسی پر پھینکا گیا جوتا

Share Article
owaisi
جنوبی ممبئی کے ناگپاڑہ علاقے میں ایک ریلی سے خطاب کرنے کے دوران مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اور رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی پر ایک شخص نے جوتا پھینک دیا۔ پولیس نے بتایا کہ ایم پی کو جوتا نہیں لگا اور ملزم کی شناخت کر لی گئی ہے اور اسے ابھی گرفتار کیا جانا ہے۔سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ رات تقریبا پونے دس بجے اویسی تین طلاق کے مسئلے کے خلاف بول رہے تھے، تبھی یہ واقعہ وپیش آیا۔ اویسی نے کہاکہمیں اپنے جمہوری حق کے لئے اپنی جان دینے کو تیار ہوں۔ یہ تمام مایوس لوگ ہیں، جو یہ نہیں دیکھ سکتے ہیں کہ تین طلاق پر حکومت کے فیصلہ کو عوام خاص طور پر مسلمانوں نے قبول نہیں کیا ہے۔
انہوں نے کہاکہیہ لوگ (جوتا پھینکنے والے کے سلسلہ میں) ان لوگوں میں سے ہیں جو مہاتما گاندھی، گووند پانسرے اور نریندر ڈابھولکر کے قاتلوں کے نظریات کی پیروی کرتے ہیں۔ بیرسٹراویسی نے کہاکہ یہ ہماری آوازکودبانہیں سکتے،آپ جب سچائی کے راستے پرچلتے ہیں تولوگ آپ کے راستے پرکانٹے بچھاتے ہیں۔اویسی نے کہاکہ یہ ہمیں ان کے خلاف سچ بولنے سے نہیں روک سکتے ہیں۔اویسی نے کہاکہ مجھے جوبولناتھامیں نے بولا اورپروگرام کامیاب ہوا۔میں یہ کہناچاہوں گا کہ میں بناکسی سیکوریٹی کے ملک میں ادھرادھرجاؤں گا ۔آپ کوجوکرناچاہتے ہیں کرسکتے ہیں لیکن میری آوازکودبانہیں پائیں گے۔
زون تین کے پولیس ڈپٹی کمشنر وریندر مشرا نے بتایا کہ پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعے اویسی پر جوتا پھینکنے والے شخص کی شناخت کر لی ہے اور اسے گرفتار کرنے کا عمل جاری ہے۔
Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *