مہاراشٹر میں شیوسینا کی قیادت میں بنے گی حکومت: راوت

Share Article

 

ممبئی، شیوسینا کے رہنما سنجے راوت نے پھر کہا ہے کہ مہاراشٹر میں شیوسینا کے ہی قیادت میں حکومت بنے گی اور وزیر اعلی شیو سینا کا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ شیوسینا کی حکومت بننے سے کوئی نہیں روک سکتا۔ اس سے پہلے جمعرات کو بی جے پی ریاستی مجلس عاملہ کے اجلاس میں سابق وزیر اعلی دیویندر فڑنویس نے دعوی کیا تھا کہ بی جے پی کی حکومت پھر آئے گی۔

راوت نے جمعہ کو صحافیوں سے کہاکہ کانگریس اور این سی پی سے ہماری بات چیت چل رہی ہے۔ ہم مہاراشٹر کے مفاد کے لئے مشترکہ پروگرام تیار کر رہے ہیں۔ خشک سالی، بارش اور انفراسٹرکچر ہماری ترجیح ہوگی۔ تینوں جماعتوں کے فارمولے پر شیوسینا سربراہ ادھو ٹھاکرے فیصلہ لیں گے۔راوت نے کہا کہ چاہے ایک پارٹی ہو یا 25 پارٹیوں کا اتحاد ہو، حکومت مشترکہ پروگرام پر ہی چلتی ہے۔ ہماری بات چیت چل رہیہے۔ مہاراشٹر کے مفاد کو ذہن میں رکھتے ہوئے مشترکہ پروگرام طے کیا جائے گا۔ راوت نے کہا کہ صرف پانچ سال کے لئے نہیں بلکہ اگلے 25 سال تک شیوسینا کا ہی وزیر اعلیہوگا۔

راوت نے یہ کہتے ہوئے سابق وزیر اعلیفڑنویس کی چٹکی لی کہ ہم یہ نہیں کہیں گے کہ میں پھر آؤں گا … میں پھر آؤں گا … میں پھر آؤں گا … راوت نے کہا کہ شیوسینا، کانگریس، این سی پی تینوں پارٹیاں ساتھ آ رہی ہیں۔ ہماری بات چیت مناسب سمت میں چل رہی ہے۔ مہاراشٹر کے مفاد کے لئے ہم مستقل اوربھروسہ مند حکومت دیں گے۔ شیوسینا جن جماعتوں کے ساتھ حکومت بنانے جا رہی ہے، انہیں طویل حکومت چلانے کا تجربہ ہے۔ ہم مہاراشٹر میں ہی رہیں گے، کیونکہ ہمارا اصل مہاراشٹر سے وابستہ ہے۔

ایسے اشارے ہیں کہ شیوسینا نے وزیر اعلی اور کانگریس اور این سی پی کے لئے نائب وزیر اعلی کی تجویز دی ہے۔ شیوسینا این سی پی-کانگریس اتحاد 17 نومبر کو حکومت بنانے کا دعوی پیش کر سکتا ہے۔ اتوار کو شیوسینا کے سربراہ بالاصاحب ٹھاکرے کی برسی ہے۔ تینوں جماعتوں نے مشترکہ پروگرام کا مسودہ تیار کر لیا ہے۔ ڈرافٹ کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی، این سی پی سربراہ شرد پوار اور ادھو ٹھاکرے کو بھیجا گیا ہے۔ تینوں جلد اس پر فیصلہ کریں گے۔ شرد پوار دہلی جاکر سونیا گاندھی سے ملاقات کرنے والے ہیں۔جمعہ کو تینوں جماعتوں کے رہنماؤںکی پھر ملاقات ہونے جا رہی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *