شیخ حسینہ کی بھانجی نے آگے بڑھوائی بچے کو جنم دینے کی تاریخ

Share Article
Brexit Deal میں ووٹ کی خاطر رہنما ٹیولپ صدیق نے آگے بڑھواي بچے کو جنم دینے کی تاریخ

بنگلہ دیش نژاد برطانیہ کی 36 سالہ رکن پارلیمنٹ نے تاریخی ووٹنگ میں ووٹ ڈالنے کے لئے بچے کو جنم دینے کی تاریخ آگے بڑھا دی۔ لیبر پارٹی کی رہنما ٹیولپ صدیق بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ کی بھانجی ہے۔

 

شیطان کا مجسمہ لگانے پر تنازع 

 

بنگلہ دیش نژاد برطانیہ کی 36 سالہ رکن پارلیمنٹ نے یورپی یونین سے الگ ہونے کے لئے مجوزہ تاریخی ووٹنگ میں ووٹ ڈالنے کے لئے اپنے بچے ولادت کی تاریخ آگے بڑھا دی۔ لیبر پارٹی کی رہنما ٹیولپ صدیق بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ کی بھانجی ہے۔انہیں ڈاکٹروں نے پیر یا منگل کو سیزیرئن (آپریشن کے ذریعے) بچے کو جنم دینے کی صلاح دی تھی لیکن انہوں نے اس عمل کو جمعرات تک کے لئے ٹال دیا تاکہ وہ ہاؤس آف کامنس میں منگل کو برےكجٹ معاہدے Brexit Deal کے لئے ہونے والے ووٹنگ میں ووٹ ڈال سکیں۔ صدیق نے ایوننگ اسٹینڈرڈ کو بتایا کہ یہ ان کا دوسرا بچہ ہے۔

 

 

پہلے بچے کی پیدائش دوران انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ وہ دوسرے بچے کو سیزیریئن کے ذریعے چار فروری کو جنم دینے والی تھیں لیکن حمل کے دوران ذیابیطس ہونے کی وجہ سے انہیں ڈاکٹروں نے بچے کی پیدائش کی کو پیر اور منگل کو فیصلہ کرنے کو کہا تھا۔ منگل کو Brexit Deal کے لئے تاریخی ووٹنگ ہونی ہے۔اس کو دیکھتے ہوئے انہوں نے لندن کے رائل مفت ہسپتال کے ڈاکٹروں سے بات کی اور وہ تاریخ کو آگے بڑھانے پر اتفاق کیا ہے۔

 

جیل میں نواز شریف کا بہترعلاج نہیں ہورہا ہے: مریم نواز

برطانوی پارلیمنٹ میں Brexit Dealمعاہدے پر منگل کو تاریخی ووٹنگ ہونی ہے۔ معاہدے کے مسترد ہونے کو لے کر تمام طرف فکر مند ہیں۔Brexit Dealسے نکلنے کے لیے 29 مارچ کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔ اس میں دو ماہ باقی ہیں۔ اگر برطانوی پارلیمنٹ میں یہ قرارداد منظور نہیں ہوتا ہے تو برطانیہ کی یورپی یونین چھوڑنے کی منصوبہ بندی کھٹائی میں پڑ سکتی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *