ٹکٹ نہیں ملا تو مدھوبنی سے آزاد امیدوار لڑیں گے شکیل احمد

Share Article

 

اپوزیشن اتحاد میں وی آئی پی کے حصے میں آئی ہے مدھوبنی لوک سبھا سیٹ

چترا اور سپول کی طرز پر دوستانہ لڑائی کرنا چاہ رہے ہیں شکیل احمد

کانگریس کے قدآورلیڈر شکیل احمد نے مدھوبنی سے لوک سبھا الیکشن لڑنے کا اعلان کر دیا ہے۔ وہ 16 اپریل کوپرچہ نامزدگی داخل کریں گے۔ شکیل چترا اور سپول کی طرز پر مدھوبنی سے دوستانہ لڑائی کرنا چاہ رہے ہیں۔
پیر کے روز یہاں انہوں نے بتایا کہ انتخابی نشان کے لئے کانگریس اعلیٰ کمان سے بات چیت چل رہی ہے۔ مجھے پوری امید ہے کہ حمایت مل جائے گی۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کانگریس سے ٹکٹ نہ ملنے پر بھی آزاد امیدوار الیکشن لڑنے کی بھی بات کہی ہے۔

خبر یہ بھی ہے کہ شکیل چاہتے ہیں کہ وہ الیکشن لڑیں اور کانگریس ان کی حمایت کرے۔

 

Image result for congress party in bihar

شکیل نے یہاں تک کہہ دیا ہے کہ اگر وہ مدھوبنی سے الیکشن نہیں لڑیں گے تو یہاں مقابلہ یکطرفہ ہو جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ انہوں نے پارٹی کے سامنے دو باتیں رکھی ہیں، ایک یا تو پارٹی مجھے انتخابی نشان دے یا پھر باہر سے حمایت کرے۔ جھارکھنڈ کی چترا سیٹ کی مثال دیتے ہوئے شکیل نے کہا ہے کہ چترا سیٹ پر دوستانہ لڑائی ہو رہی ہے تو مدھوبنی میں کیوں نہیں ہو سکتی؟ سپول میں رنجیتا رنجن کانگریس کے ٹکٹ پر انتخاب لڑ رہی ہیں لیکن، آر جے ڈی وہاں بھی ایک آزاد امیدوار کی حمایت کر رہا ہے۔
اپوزیشن اتحاد میں سیٹ تقسیم میں مدھوبنی لوک سبھا سیٹ وکاس انسان پارٹی (VIP) کے کھاتے میں گئی تھی۔ وی آئی پی نے یہاں سے سابق ایم پی حکم دیو نارائن یادو کے بیٹے اور سابق آر جے ڈی لیڈر بدری ناتھ پوروے کو ٹکٹ دیا ہے۔ بی جے پی نے اشوک کمار یادو کو انتخابی میدان میں اتارا ہے۔ اب یہاں پرچہ نامزدگی عمل جاری ہے۔ مدھوبنی میں پانچویں مرحلے میں 6 مئی کو پولنگ ہونی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *