شاہین باغ مظاہرہ:مفاد عامہ کے پیش نظر قانون کے تحت کام کرے حکومت اور پولیس: ہائی کورٹ

Share Article

دہلی کے شاہین باغ میں چل رہے مظاہرے کو لے کر دائر عرضی پر سماعت کرتے ہوئے دہلی ہائی کورٹ نے پولیس اور حکومت سے کہا ہے کہ تمام متعلقہ محکمہ اس مسئلے کو دیکھیں۔ سرکاری قوانین اور قانون کے مطابق کام کریں۔ مفاد عامہ کو ذہن میں رکھتے ہوئے کارروائی کریں۔ قانون کی بھی پاسداری کریں۔

درخواست وکیل امت ساہنی نے دائر کی تھی۔ عرضی میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ کالندی کنج اور شاہین باغ کے راستے کو کھولنے کے لئے کورٹ حکم دے۔ راستہ بند ہونے کی وجہ سے دوسرے متبادل راستوں پر بھاری بھیڑ ہو رہی ہے۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ کالندی کنج اور شاہین باغ کے راستے میں پولیس کے کلوزر لگانے کی وجہ سے لوگوں کو کافی تکلیف ہوتی ہے۔

درخواست میں کہا گیا تھا کہ گزشتہ 15 دسمبر سے شہریت ترمیمی ایکٹ کی مخالفت میں مظاہرے کی وجہ سے یہ راستہ بند ہے۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ اس راستے کو بند کرکے کی وجہ سے لوگوں کوڈی این ڈی ایکسپریس وے اور آشرم کے متبادل روٹ سے جانا پڑتا ہے۔ درخواست میں کہا گیا تھا کہ اس راستے کے بندہونے کی وجہ سے نہ صرف دفتر جانے والے لوگوں کو بلکہ بچوں کو اپنے اسکول جانے میں بھی دقت ہوتی ہے۔ بچوں کو ان کے اسکول کے وقت سے دو دو گھنٹے پہلے نکلنا پڑتا ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *