شیلٹر ہوم سے 7 لڑکیاں لاپتہ ہوئیں کیا کی گئی، کوئی بڑی سازش تو نہیں؟

Share Article
shelter-home-mokama

پٹنہ: بہار میں ایک بار پھر گرلس شیلٹر ہوم شہ سرخیوں میں ہے۔یہ معاملہ پٹنہ کے مکاما کا ہے جہاں ناجرتھ اسپتال کے ذریعہ منتظم شیلٹر ہوم سے 7 لڑکیاں فرار ہو گئی ہیں۔ فرار ہونے والی7 لڑکیوں میں سے پانچ لڑکیاں مظفر پور سانحہ کی متاثرہ ہیں۔ فرار لڑکیوں کی تلاش میں چھاپہ ماری کی جا رہی ہے ۔ سات لڑکیوں کو ایک ساتھ فرار ہونے کے بعد سے انتظامیہ محکمے میں افرا تفری مچی ہوئی ہے۔ معاملے کی معلومات پولیس کو ملی تو وہ بھی سکتے میں رہ گئی۔ دیہی ایس پی نے پورے معاملے کی معلومات لی ہے۔معلومات کے مطابق تمام لڑکیاں صبح ساڑھے تین بجے سے فرار ہیں۔

پہلی نظرمیں ناجرتھ سوسائٹی کی طرف سے منظم این جی او کی لاپروائی کے سبب ہی لڑکیاں فرار ہوئی ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ لڑکیاں گرل کاٹ کر فرار ہوئی ہے۔ اس واقعہ سے کچھ دن پہلے ہی ایک لڑکی نے اپنی کلائی بھی کاٹ لی تھی جس کا سبب باہمی تنازعہ کے طور پر سامنے آیا تھا۔ این جی او کی طرف سے منتظم شیلٹر ہوم میں پولیس انتظامیہ کے حکام کو بھی جانے نہیں دیا جاتا تھا۔ کئی بار معائنہ کے لئے گئے پولیس عہدیداروں کو بھی سوسائٹی کی طرف سے این جی او کے عدم تعاون کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

کلائی کاٹنے کے اس واقعہ کے بعد متاثرہ کا ایمس میں علاج ہوا تھا۔ اس واقعہ کے بعد سے بہار میں ایک بار پھر شیلٹر ہوم کی سیکورٹی میں خامی نظر آئی ہے۔فی الحال پولیس کا کوئی بھی افسر کیس میں کچھ بولنے سے بچ رہا ہے۔ معلوم ہو کہ اس سے پہلے بہار میں مظفر پور شیلٹر ہوم سے جڑے کئی معاملے سامنے آئے ہیں۔ پورے معاملے کی جانچ جہاں سی بی آئی کر رہی ہے وہیں اس معاملے میں کورٹ نے بھی بہار حکومت کو کئی بار پھٹکار لگائی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *