مورتی وسرجن کے بعد ستلی بم دھماکہ، ایک نوجوان کی موت

Share Article

 

۔ نوجوان کے گرنے پر دھماکے کے ساتھ جیب میں رکھے ستلی بم سے ہوا حادثہ

ضلع میں آتش بازی کے پٹاکھے (ستلی بم) کے دھماکے سے ایک نوجوان کی موت ہو گئی اور پانچ دیگر لوگ شدید طور پر زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ جمعرات کے روز پولیس نے لاش قبضے میں لے کر واقعے کی تحقیقات شروع کر دی ہے۔ اس واقعہ کو لے کر تحقیقات کے احکامات دیئے گئے ہیں۔

ضلع کے سمیرپور تھانہ علاقہ کے پارا ریپورا گاؤں میں بدھ کی رات دیوی مورتیوں کے وسرجن کے بعد گاؤں کے نوجوان دیمار مقامی ستلی بم (پٹاخے) چھڑاتے ہوئے گھر واپس آ رہے تھے۔ اس میں شیوکانت (16) اپنی جیب میں بم رکھے تھا۔ وہ رقص کرتے ہوئے زمین پر گر پڑا جس سے جیب میں رکھا مقامی ستلی بم دھماکے کے ساتھ پھٹ گیا۔ دھماکے سے شیوکانت شدید طور پرجھلس گیا۔ دھماکے سے گاؤں ہی اوم پرکاش (16)، رام ملن (22)، روہت کمار (21) اور شیوم (20) سمیت پانچ افراد زخمی ہو گئے۔  خمیوں کو سرکاری اسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں شیوکانت پرجاپتی کو مردہ قرار دے دیا گیا۔ اوم پرکاش کو حالت نازک ہونے پر کانپور ہیلٹاسپتال کیلئے ریفر کر دیا گیا ہے۔

اس سے پہلے تھانہ علاقہ کے بلہڑی گاؤں کی دیوی مورتی کے وسرجن دوران دو نوجوان مردوں کے ٹکرانے سے جیب میں رکھے ستلی بم دھماکے کے ساتھ پھٹ گئے تھے جس سے گرام پردھان جے ویر سنگھ کھنگار کا بھتیجا پون کھنگار اور دپیک (20) زخمی ہو گئے تھے۔ ان دونوں کا علاج اب بھی اسپتال میں جاری ہے۔ سمیرپورتھانے کے انچارج انسپکٹر گریندر پال سنگھ نے بتایا کہ اس واقعہ کی معلومات انہیں جمعرات کے روز ملی جس کی جانچ کے لیے سب انسپکٹر کو موقع پر بھیجا گیا ہے۔ لاش کا پنچنامہ بھرنے کی کارروائی بھی کی جا رہی ہے۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *