شہید کے تابوت ساتھ سیلفی-لیڈر کی ہنسی، ان 5 سوالوں سے کانگریس نے مودی حکومت کو گھیرا

Share Article

 

کانگریس لیڈر رنديپ سرجےوالا نے جمعرات کو پریس کانفرنس کر مودی حکومت پر کئی سوال داغے۔ پلوامہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے پر حکومت کی ناکامی، وزراء کے زیادتی کو لے کر نشانہ لگایا۔

 

Image result for modi pulwama attack

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے ٹھیک ایک ہفتے بعد کانگریس کے ترجمان رنديپ سرجےوالا نے نریندر مودی حکومت پر شدید حملہ بولا ہے۔ سرجےوالا نے جمعرات کی صبح پریس کانفرنس کر کہا کہ جس دوران پلوامہ میں دہشت گردانہ حملہ ہوا تھا، تب وزیر اعظم جم كاربیٹ میں فلم کی شوٹنگ کر رہے تھے۔ کانگریس نے اس دوران وزیر اعظم نریندر مودی پر 5 بڑے سوال داغے اور ان کے وزراء کو بھی نشانہ بنایا۔

Image result for pulwama attack

کانگریس نے وزیر اعظم سے پوچھے 5 سوال …

وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ اور قومی سلامتی کے مشیر NSA اجیت ڈوبھال آپ ناکامی کی ذمہ داری کیوں نہیں قبول کرتے ہیں؟

پلوامہ حملے میں استعمال ہوا اتنا دھماکہ خیز مواد، راکٹ لانچر کہاں سے آئے، گاڑی نے وہاں کس طرح داخل کیا؟

پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے ٹھیک 48 گھنٹے پہلے جاری دھمکی کی ویڈیو کو نظر انداز کیوں کیا گیا؟

سی آر پی ایف نے اگر ہوائی سفر کی مانگ کی تھی، تو ان کی مانگ کو کیوں نہیں مانا گیا؟

مودی حکومت کے 56 ماہ کی مدت کار میں 488 جوان شہید ہوئے ہیں، نوٹ بندي سے دہشت گردانہ حملے کیوں بند نہیں ہوئے ہیں؟

صرف تیکھے سوال ہی نہیں بلکہ کانگریس کے ترجمان رنديپ سرجےوالا نے کئی ثبوتوں کے ساتھ کانگریس پر نشانہ لگایا۔ انہوں نے اس دوران وزیر اعظم مودی کے جم کاربٹ دورے پر بھی نشانہ لگایا۔ سرجےوالا نے کہا کہ 14 فروری کو 3.10 بجے پلوامہ میں دہشت گردانہ حملہ ہوا، لیکن وزیر اعظم شام پونے سات بجے تک جم كاربیٹ میں فلم کی شوٹنگ کرتے رہے تھے۔

 

 

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم حملے کے بعد بھی رام نگر میں چائے ناشتہ کر رہے تھے، اپنے حامیوں کا سلام کر رہے تھے۔ سرجےوالا نے دعوی کیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی صدر امت شاہ مسلسل انتخابی ریلیاں کر رہے ہیں اور پلوامہ دہشت گردانہ حملے پر سیاست کر رہے ہیں۔

Share Article

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *