عراق میں سیکورٹی فورسز کی فائرنگ سے 7 مظاہرین ہلاک

عراق میں حکومت مخالفت مظاہروں کا سلسلہ ہنوز جاری ہے ۔متعدد ہلاکتوں کے باوجود مظاہرے ختم نہیں ہو رہے ہیں ۔حکومت کی جانب سے اقدامات بھی مظاہروں پر لگام لگانے میں نا کام ہیں۔تازہ معاملے میں عراق میں سیکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے حکومت کے خلاف احتجاج کرنے والے 7 مظاہرین ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

Image result for Security forces kill 7 demonstrators in Iraq
میڈیا رپورٹوںکے مطابق عراق کے بڑے شہروں بصرہ اور بغداد میں فوج اور پولیس نے حکومت کے خلاف احتجاج کرنے والے مظاہرین پر گولیاں چلادیں۔ دارالحکومت بغداد میں دریائے دجلہ پر قائم پل اور اس کے نزدیک تحریر اسکوائر میں سیکڑوں افراد احتجاج کررہے تھے۔سیکیورٹی اہلکاروں نے انھیں وہاں سے ہٹانے کے لیے براہ راست فائرنگ اور ا?نسو گیس کی شیلنگ کی جبکہ دستی بموں کا بھی استعمال کیا۔ اس واقعے میں 7 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔ اسی طرح سیکورٹی فورسز نے بصرہ میں بھی مظاہرین کے خلاف سخت کارروائی کی۔عراق بھر میں بے روزگاری اور کرپشن کے خلاف مظاہرے ہورہے ہیں جن میں ہزاروں افراد شریک ہیں۔ عراقی وزیراعظم عادل عبدالمہدی نے احتجاج ختم کرنے کے لیے زور دیتے ہوئے نئی انتخابی اصلاحات کا اعلان بھی کیا ہے۔چند روز قبل مظاہرین نے ایرانی قونصل خانے پر دھاوا بول کر وہاں سے پرچم بھی اتار دیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *